سہارنپور:پولس مارپیٹ میں ہاتھ پاؤں ٹوٹنے والے مسلم نوجوانوں کی باعزت رہائی

84

سہارنپور: بی جے پی کی سابق ترجمان نوپور شرما کی طرف سے پیغمبر اسلام کے خلاف کیے گئے تبصرے کے خلاف 10 جون کو اتر پردیش کے سہارنپور میں احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ اس کے بعد یوپی پولس نے تقریباً 85 لڑکوں کو گرفتار کیا تھا۔

لڑکوں کو گرفتار کرنے کے بعد پولیس نے ان کی زبردست پٹائی کی۔ جن لڑکوں کی پولیس نے پٹائی کی تھی ان میں سے آٹھ کو سہارنپور کی عدالت نے بری کر دیا ہے۔ سہارنپور میں نوجوانوں کی پٹائی کا ویڈیو وائرل ہوا تھا۔ سب سے پہلے پولیس مار پیٹ کرنے سے انکار کیا، پھر این ڈی ٹی وی کی رپورٹ کے بعد معاملے کی جانچ کے احکامات دیے گئے۔

جن لڑکوں کو پولس نے مارا تھا، ان میں سے آٹھ لڑکوں کو سہارنپور کی عدالت نے بری کر دیا ہے۔ جیل سے باہر آنے والے محمد علی کا پولیس کی پٹائی سے ہاتھ ٹوٹ گیا۔