سپریم کورٹ نے مہندر سنگھ دھونی کو بھیجا نوٹس

906

نئی دہلی :ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور وکٹ کیپر بلے باز مہندر سنگھ دھونی کو ملک کی سب سے بڑی عدالت یعنی سپریم کورٹ نے نوٹس بھیجا ہے۔ سپریم کورٹ نے دھونی کو یہ نوٹس آمرپالی گروپ معاملے میں بھیجا ہے، اور ساتھ ہی آمرپالی گروپ معاملے میں شروع کی گئی ثالثی کی کارروائی پر بھی اسٹے لگا دیا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ آمرپالی گروپ معاملے میں ثالثی کا حکم دہلی ہائی کورٹ نے دھونی کی عرضی پر ہی دیا تھا۔ دھونی نے دہلی ہائی کورٹ میں عرضی داخل کرتے ہوئے کہا تھا کہ آمرپالی گروپ نے ان کی فیس نہیں دی ہے۔ حالانکہ سپریم کورٹ نے اس معاملے میں دھونی کو نوٹس جاری کر ان کے لیے مشکلات میں اضافہ کر دیا ہے۔

دراصل مہندر سنگھ دھونی کے ذریعہ دہلی ہائی کورٹ میں عرضی داخل کیے جانے کے بعد آمرپالی گروپ نے سپریم کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا تھا۔ اسی معاملے میں عدالت عظمیٰ نے دھونی کو نوٹس بھیجا ہے اور ساتھ ہی ثالثی کی کارروائی پر بھی روک لگا دی ہے۔ واضح رہے کہ دھونی کبھی آمرپالی گروپ کے برانڈ امبیسڈر تھے۔ حالانکہ سال 2016 میں انھوں نے خود کو آمرپالی گروپ سے علیحدہ کر لیا تھا۔ بعد ازاں انھوں نے عدالت عظمیٰ میں عرضی دے کر اپنی 40 کروڑ روپے کی فیس دلانے کا مطالبہ بھی کیا تھا۔