کلکتہ ، 03 جنوری (یواین آئی ) ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ (بی سی سی آئی) کے صدر سوربھ گانگولی کی صحت اب بہتر ہے اور ان کا کورونا ٹیسٹ بھی منفی آیا ہے۔ لیکن انہیں معمول کے کام کاج میں تین سے چار ہفتے لگیں گے۔سابق ہندوستانی کپتان گانگولی جنوبی کلکتہ واقع بیہالا میں اپنی رہائش گاہ میں سنیچر کی صبح جم میں ورک آوٹ کررہے تھے جہاں اچانک سینے میں درد کی شکایت کے بعد انہیں ووڈلینڈس اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔ اسپتال میں ان کی جانچ کی گئی جہاں ان کی انجیوپلاسٹی بھی ہوئی ۔ووڈلینڈس اسپتال کی سی ای او ڈاکٹر روپالی باسو نے گانگولی کی صحت کی معلومات دیتے ہوئے اتوار کے روز بتایا کہ گانگولی فی الحا ل صحتیاب ہیں ۔ڈاکٹر باسو نے کہا ، "میں نے صبح ان سے ملاقات اور بات بھی کی۔

ان کے ہمراہ ان کی اہلیہ ڈونا اور بھائی سنیہاشیش بھی تھے۔ گانگولی اپنے کنبے کے ساتھ وقت گزار رہے ہیں اور جب میں انہیں دیکھنے گئی تو وہ ناشتہ کر رہے تھے ۔ "انہوں نے کہا ، "جب انہیں سینے میں درد ہو ا تو وہ اس وقت جم میں تھے۔ اس کے بعد ایک بجے کے قریب انہیں اسپتال لایا گیا اور اس کی جانچ کی گئی ۔ جانچ کے دوران ہمیں پتہ چلا کہ ان کا دل ٹھیک سے کام نہیں کررہا ہے۔

ہم نے انجیو پلاسٹی کی جس میں شریانوں میں بلاک کا پتہ چلا جو اسٹینٹ ڈال کر ٹھیک کیا گیا ہے لیکن ابھی بھی دو بلاک ہیں جنہیں ٹھیک کرنا باقی ہے۔ڈاکٹر باسو نے کہا ، "ہم اس وقت سرجری کے بارے میں نہیں سوچ رہے ہیں کیونکہ گانگولی کی عمر کم ہے اور انجیو پلاسٹی میں بھی ایڈوانس ہوگئی ہے۔ لیکن ہم ملک کے بہترین ماہر امراض قلب کی رائے لے رہے ہیں اور اس کے بعد ہی ہم اس بارے میں فیصلہ کریں گے کہ شریانوں میں دو بلاک کا کیا کرنا ہے۔ ایک بار یہ ٹھیک ہو جائے تو تین ۔چار ہفتے میں گانگولی معمول کا کام کاج سنبھال سکیں گے اور ہم سب چاہتے ہیں کہ دادا جلد ہی مکمل صحت یاب ہو جائیں ۔


اپنی رائے یہاں لکھیں