سماج وادی پارٹی کی لیجسلیچر پارٹی کی میٹنگ میں اعظم خان اور شیو پال نے شرکت نہیں کی

0 14

لکھنو:22مئی(ایجنسیز)حال ہی میں، سماج وادی پارٹی کے سینئر ایم ایل اے محمد اعظم خان، جنہیں دو سال سے زیادہ عرصے کے بعد جیل سے رہا کیا گیا ہے، اور ان کے بیٹے عبداللہ اعظم نے پیر سے اتر پردیش قانون ساز اسمبلی کے بجٹ اجلاس سے قبل اتوار کو سماج وادی پارٹی کے لیجسلیچر پارٹی کے ہوئے اجلاس میں شرکت نہیں کی۔ایس پی صدر اکھلیش یادو کی موجودگی میں ہونے والی اس میٹنگ میں ان کے چچا شیو پال سنگھ یادو بھی غیر حاضر رہے۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق اعظم خان اور ان کے بیٹے عبداللہ رام پور میں تھے، جب کہ شیو پال یادو لکھنؤ میں تھے، پھر بھی انہوں نے پارٹی میٹنگ میں شرکت نہیں کی۔

اعظم خان کے جیل سے باہر آنے کے بعد پارٹی کی اہم میٹنگ میں شرکت نہ کرنے پر پارٹی سے ناراضگی کے چرچے شروع ہو گئے ہیں۔ کہا جا رہا ہے کہ دونوں سینئر لیڈروں کی عدم موجودگی اس بات کی طرف واضح اشارہ ہے کہ سماج وادی پارٹی کے اندر دراڑ دن بدن گہری ہوتی جا رہی ہے اور سینئر اور نوجوان لیڈروں کے درمیان واضح تقسیم نظر آ رہی ہے۔دریں اثنا، سماج وادی پارٹی کے ایم ایل اے روی داس ملہوترا نے دونوں لیڈروں کی ناراضگی اور پارٹی میں پھوٹ پڑنے کی قیاس آرائیوں کو دور کرنے کی کوشش کرتے ہوئے کہا کہ اعظم خان اور ان کا بیٹے عبداللہ اسمبلی اجلاس میں شرکت کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ سینئر رہنما صحت کی وجہ سے اتوار کو اجلاس میں شریک نہیں ہوئے۔