• 425
    Shares

ریاض : سعودی عرب میں انسداد بدعنوانی کمیشن نے اعلان کیا ہیکہ اس نے حاضر سرویس افسران اور ریٹائرڈ عہدیداروں سمیت کئی افراد کیخلاف مجرمانہ مقدمات کی تحقیقات شروع کر دی ہیں۔کمیشن کے ایک سرکاری ذریعہ نے منگل کو بتایا کہ سب سے نمایاں کیسز نیشنل گارڈ کی وزارت کے تعاون سے شروع کئے گئے ہیں۔جہاں میجر جنرل کے عہدہ کے ایک افسر اور میجر جنرل کے عہدہ کے تین ریٹائرڈ افسران سے تفتیش کی گئی۔انہوں نے مزید کہا کہ افسران نے نیشنل گارڈ وزارت میں اپنی مدت ملازمت کے دوران ایک مقامی کمپنی کے مالک اور غیر ملکی کمپنیوں کے نمائندے سے 212 ملین 2لاکھ 22 ہزار ریال کی رقم وصول کی جس کے بدلے میں غیر ملکی کمپنیوں کو وزارت کی طرف سے ٹھیکے دیئے گئے۔دوسرے کیس میں بڑی کنٹریکٹنگ کمپنی میں پروجیکٹ مینجمنٹ کے ڈائریکٹر کو گرفتار کیا گیا۔ اس پر 24 ملین ریال قسطوں میں اور 500,000 ریال سرکاری ملازمین اور ان کے خاندانوں کے سفری اخراجات کے طور پر ادا کرنے کا الزام ہے۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔ 


اپنی رائے یہاں لکھیں