سعودی عرب نے مزید 6 شعبوں کو اپنے شہریوں کے لیے مختص کردیا، وزارت ہیومن ریسورسز انجینئر احمد بن سلیمان الراجحی نے ان شعبوں کو سعودی شہریوں کو مختص کرنے کی منظوری دے دی۔وزارت ہیومن ریسورسز کے مطابق جن پیشوں کو شہریوں کے لیے مختص کیا گیا ہے ان میں قانونی مشاورت (لیگل کنسلٹیشن)، لا فرمز (قانونی ایجنسیاں)، کسٹم کلیئرنس، ریئل اسٹیٹ ایکٹیویز (غیر منقولہ جائیدادوں کی سرگرمیاں) فلم انڈسٹری، ڈرائیونگ اسکول، ٹیکنیکل اینڈ انجینئرنگ پروفیشنز (تکنیکی اور انجینئرنگ کے پیشے) شامل ہیں۔

 

ان پیشوں کو سعودی شہریوں کے لیے مختص کرنے سے 40 ہزار اسامیاں پیدا ہوں گی۔سعودی وزارت ہیومن ریسورسز کا کہنا ہے کہ منصوبے کے مطابق سال رواں میں سعودی شہریوں کے لیے دو لاکھ 3 ہزار اسامیاں پیدا کرنا ہے۔

 

اس سے قبل وزارت ہیومن ریسورسز نے رواں سال کے آغاز میں شاپنگ مالز، ریستوران، کیفے شاپ، مرکزی سپلائی مارکیٹ اور نجی اسکولوں میں تعلیمی شعبوں کو شہریوں کے لیے مختص کر دیا تھا۔