• 425
    Shares

ریاض : کورونا کی عالمی وبا کے باعث اسکولوں میں تعلیمی سلسلہ منقطع ہونے کے بعد سعودی عرب میں اتوار کو تعلیمی ادارے دوبارہ کھل گئے اور طلباء کی واپسی کا یہ پہلا دن تھا۔عرب نیوز کے مطابق پہلے روز جہاں اسکول آنے والوں کے چہروں پر مسکراہٹ بکھری ہوئی تھی وہیں چند ایک کو آنسو بہاتے بھی دیکھا گیا تاہم کسی قسم کی پریشانی یا افراتفری نہیں رہی۔ایک سعودی ماں ریفال امین نے میڈیاکو بتایا ہے کہ ان کے لئے اپنے دو بیٹوں کو اسکول جاتے ہوئے دیکھنا مشکل تھا جبکہ میری 10 سالہ بیٹی گھر پر ہی موجود تھی۔سعودی وزارت تعلیم کی جانب سے جاری کردہ ہدایات کے مطابق ریفال امین کی بیٹی کو تاحال گھر پر آن لائن تعلیم جاری رکھنا ہو گی۔ریفال نے بتایا کہ آج صبح میرے بیٹے اسکول جانے سے ہچکچا رہے تھے حالانکہ دونوں کو ویکسین لگ چکی ہے۔ انہیں صبح اٹھانا اور اسکول کے لئے بھیجنا ایک مشکل مرحلہ تھا حلانکہ یہ کوئی نئی بات نہیں تھی۔اسکول سے واپسی پر دونوں نے بتایا کہ ہچکچاہٹ کے باوجود انہوں نے اسکول میں اپنے دوستوں کو دیکھ کر خوشی کا اظہار کیا۔ بڑے بیٹے عبداللہ نے بتایا کہ چونکہ چھوٹی بہن اسکول نہیں جا رہی تھی اس لیے ہم نے صبح اداس ہونے کا ڈرامہ کیا حالانکہ ہم اسکول واپسی کے لیے اندر سے خوش تھے۔عبداللہ کا کہنا تھا کہ میرے اس تاثر کو ماں نے بھانپ لیا تھا اور مجھے اس کا احساس بھی ہو گیا تھا۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔ 


اپنی رائے یہاں لکھیں