سعودی عرب اور مالا مال ہوگیا، قدرتی گیس کے دونئے بڑے ذخائر دریافت

537

سعودی عرب کے وزیرتوانائی شہزادہ عبدالعزیز بن سلمان نے مشرقی صوبہ میں قدرتی گیس کے دونئے ذخائردریافت کرنے کا اعلان کیا ہے۔انھوں نے بدھ کو ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’سعودی آرامکو مشرقی صوبہ میں غیرروایتی قدرتی گیس کے دوفیلڈزکو دریافت کرنے میں کامیاب رہی ہے۔’اوتاد‘ غیرروایتی قدرتی گیس فیلڈ غوارفیلڈ کے جنوب مغرب میں دریافت ہوئی ہے اور یہ الہفوف شہر سے 142 کلومیٹر جنوب مغرب میں واقع ہے اور’الدہناء‘غیر روایتی قدرتی گیس فیلڈ ظہران شہرسے 230 کلومیٹر جنوب مغرب میں دریافت ہوئی ہے۔

شہزادہ عبدالعزیزنے کہا کہ اس دریافت کی اہمیت مملکت کے قدرتی گیس کے ذخائر کو مضبوط بنانے میں مضمر ہے اور یہ مملکت کی حکمت عملی کی حمایت اورمائع ایندھن کی منتقلی پروگرام کے اہداف کے حصول میں اہم کردارادا کرے گی۔

وفاقی وزیر کے مطابق اوتاد کنویں108001 سے قدرتی گیس ایک کروڑمعیاری مکعب فٹ یومیہ اور 740 بیرل کنڈنسیٹ کی شرح سے بہ رہی ہےاور 100921 فیلڈ سے ایک کروڑ 69لاکھ معیاری مکعب فٹ یومیہ اور 165 بیرل کنڈنسیٹ کی شرح سے گیس بہ رہی تھی۔

انھوں نے بتایا کہ ’الدہنا‘گیس فیلڈ نے الدہناء-4 کنویں سے گیس کا بہاؤ81لاکھ معیاری مکعب فٹ یومیہ کی شرح سے ریکارڈ کیا ہے جبکہ الدہناء فیلڈ کے کنویں 370100 سے گیس کا بہاؤایک کروڑ 75 لاکھ اسٹینڈرڈ کیوبک فٹ یومیہ اور 362 بیرل کنڈنسیٹ کی شرح سے ریکارڈ کیا گیا۔

جنرل اتھارٹی برائے شماریات کے فراہم کردہ اعدادوشمار کے مطابق سعودی عرب میں اس سال تیل کے شعبے میں سرگرمیوں میں 14.5 فی صد اضافہ ہوا ہے۔ایک سال قبل اس شعبے میں یہ شرح 9.3 فی صدتھی۔