سعودی عرب:اقامے،خروج، دوبارہ داخلے اوروزٹ ویزوں میں اختتام سال تک مفت توسیع

2

سعودی عرب نے رہائش کے اجازت ناموں (اقامے) اور خروج اورمملکت میں دوبارہ داخلے کے لیے ویزوں کی میعادمیں 31 دسمبر تک ازخود مفت توسیع کرنا شروع کردی ہے۔سعودی عرب کی نظامت عامہ برائے پاسپورٹس نے کہاہے کہ یہ اقدام سعودی شاہ سلمان بن عبدالعزیز کے احکامات کی تعمیل میں کیا جارہا ہے۔انھوں نے سعودی حکام کو کرونا وائرس کے شہریوں اور مکینوں پرمعاشی اثرات کو کم سے کم کرنے کی ہدایت کی ہے۔

ویزوں میں یہ توسیع کووڈ-19 کی وبا کے نتائج ومضمرات سے نمٹنے کے لیے حکومت کی کوششوں کا تسلسل ہے اور سعودی وزیرخزانہ نے اس کی منظوری دے دی ہے۔ڈائریکٹوریٹ کا کہنا ہے کہ یہ اقدام احتیاطی اورحفاظتی نقطہ نظرسے بھی کیا جارہاہے تاکہ شہریوں اور مکینوں کے تحفظ صحت کی ضمانت کو یقینی بنایا جاسکے اوران پروَبا کے مالی اور معاشی اثرات کو کم کرنے میں مددمل سکے۔

ڈائریکٹوریٹ نے اشارہ دیا کہ ویزوں میں توسیع کے لیے کسی فرد کو محکمہ پاسپورٹ کے دفاترمیں جانے کی ضرورت نہیں اور اس کے بغیر ہی قومی اطلاعات مرکزکے تعاون سے خودکارنظام کے تحت ویزوں میں توسیع ہو جائے گی۔ویزوں کی میعاد میں توسیع کا عمل درج ذیل طریق کار کے مطابق کیا جارہا ہے:

اوّل: رہائش کے اجازت ناموں کے جواز کے ساتھ ساتھ ان رہائشیوں کے خروج اور دوبارہ داخلے کے ویزوں میں توسیع کی جارہی ہے، جو ان ممالک میں مقیم ہیں جہاں سے آنے والے مسافروں کا کروناوائرس کی پابندیوں کے نتیجے میں سعودی عرب میں داخلہ 31جنوری2022 تک معطل ہے، سوائے ان لوگوں کے جنھیں روانہ ہونے سے پہلے مملکت سعودی عرب میں مکمل طور پرویکسین لگا دی گئی تھی۔

دوم: وزارتِ خارجہ کی جانب سے سعودی عرب سے باہراورکروناوائرس کے پھیلنے کے نتیجے میں مملکت میں داخلے کی معطلی کا سامنا کرنے والے ممالک کے زائرین کے لیے وزٹ ویزوں کے جوازمیں 31 جنوری 2022 تک توسیع کی جارہی ہے۔