مکہ مکرمہ : عائشہ المہاجری جو معروف اسلامی اسکالر ہیں، اُنھیں سعودی حکام نے مبینہ طور پر اپنے مکان میں تبلیغ اسلام اور قرآن سے متعلق کورسیس کی تعلیم دینے پر محروس کیا ہے۔ ایک رپورٹ میں بتایا گیا کہ 65 سالہ عائشہ کو سعودی انٹلی جنس کے 20 رکنی اسکواڈ نے مکہ میں واقع اُن کے مکان سے دو دیگر خواتین کے ساتھ حراست میں لیا۔ حکام نے اِس گرفتاری کی تصدیق کی ہے۔ عائشہ کی محروسی کی بنیاد یہ بتائی گئی کہ وہ اپنے مکان پر رضاکارانہ طور پر قرآن کے کورسیس کی تعلیم دے رہی تھیں۔


اپنی رائے یہاں لکھیں