ریاض : سعودی عرب میں قرنطینہ قواعد کی خلاف ورزی پر سخت سزائیں مقرر کر دی گئیں۔قرنطینہ قوانین کی خلاف ورزی پر 2 سال قید 2 لاکھ ریال تک جرمانہ کیا جا سکتا ہے۔ اس حوالے سے بیورو آف انویسٹی گیشن اینڈ پبلک پراسیکیوشن نے انتباہ کر دیا ہے۔بیورو آف انویسٹی گیشن اینڈ پبلک پراسیکیوشن نے خبردار کیا ہے کہ قرنطینہ کی خلاف ورزی پر قید اور جرمانے کیے جائیں گے۔محکمے کا کہنا ہے کہ یہ جرمانے ان قوانین کی خلاف ورزی کرنے والوں پر عائد ہوں گے جو یا تو خود کورونا کا شکار تھے یا وائرس والے کسی شخص کے ساتھ رابطے میں تھے یا جن پر اس وائرس کا کیریر ہونے ہونے کا خدشہ تھا۔اس سے قبل حکومت نے بیان میں واضح کیا تھا کہ عوامی مقامات پر جان بوجھ کر کورونا پھیلانے آیا وبا کے پھیلاؤ کا سبب بننے والوں کو پانچ سال قید اور 5 لاکھ ریال جرمانہ کیا جائے گا۔تارکین وطن کو انتباہ جاری کرتے ہوئے کہا گیا کہ ایسا کرنے والوں کو مملکت سے نکال دیا جائے گا اور ہمیشہ کے لیے دروازے بند کر دیے جائیں گے کبھی واپسی ممکن نہیں ہو گی۔خلاف ورزی دہرانے پر دگنی سزا بھی تجویز کی گئی ہے اور واضح کیا گیا ہے کہ وبا پھیلانے کا سبب بننے والوں کے خلاف سختی سے نمٹا جائے گا۔


اپنی رائے یہاں لکھیں