سبھاش چندر بوس کے قریبی آزاد ہند فوج میں میجر رہ چکے ایشور لال کا انتقال

89

نئی دہلی:انڈین نیشنل آرمی میں میجر رہ چکے ایشور لال سنگھ کا سنگاپور میں جمعہ کے روز انتقال ہو گیا۔ ان کی عمر 92 سال تھی اور ان کے انتقال کے خبر کی تصدیق اہل خانہ کے اراکین نےکی۔ ایشور لال سنگھ نے نیتاجی سبھاش چندر بوس کی قیادت میں ملک کی خدمات انجام دی تھی۔ وہ 1943 میں انڈین نیشنل آرمی (آئی این اے) میں شامل ہوئے تھے۔

وہ سبھاش چندر بوس کے قریبی تھے۔ قابل ذکر ہےکہ آئی این اے سنگاپور اور ملیشیا میں مختلف اہم ذاتیاتی گروپوں، ہندوؤں، مسلمانوں اور سکھوں کا ایک مجموعہ تھا۔آنجہانی ایشور لال سنگھ کےبھتیجے میلوندر سنگھ نے ایک خبر رساں ایجنسی کو بتایا کہ ’’ہمیں اپنے چاچا (ایشور لال سنگھ) کے انتقال کے بارے میں آپ کو مطلع کرتے ہوئے غم ہو رہا ہے۔

5 اگست 2022 کو ان کا انتقال ہو گیا۔‘‘ سنگاپور میں ہندوستانی ہائی کمیشن نے انتقال کی تصدیق کرتے ہوئے ایک ٹوئٹ کیا ہے جس میں لکھا ہے کہ ’’ہم آئی این اے کے سرکردہ جوان لال سنگھ کے انتقال پر گہرے غم کا اظہار کرتے ہیں۔ ان کی روح کو سکون ملے۔‘‘ایشور لال سنگھ کے انتقال کی خبر ملنے کے بعد مرکزی وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے بھی اظہارِ افسوس کیا۔ انھوں نے ایک ٹوئٹ کیا جس میں لکھا ہے ’’ایک ناقابل تلافی خسارہ۔ آئی این اے کے مشہور میجر (سبکدوش) ایشور لال سنگھ نے غیر معمولی قوت اور محنت کے ساتھ ہندوستان کی آزادی کے لیے لڑائی لڑی۔