• 425
    Shares

سائنسدانوں کی جانب سے دعویٰ کیا گیا ہے کہ جھڑتے بالوں اور گنج پن کا علاج اب ممکن ہو سکے گا۔غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق سائنسدانوں کی جانب سے ’نینو پارٹیکل سیرم‘ پر مشتمل ایک محلول بنایا گیا ہے جس کے ذریعے چوہوں پر حاصل ہونے والے نتائج نے محققین کو بھی حیران کر دیا ہے، سائنسدانوں کی جانب سے اب یہ دعویٰ کیا گیا ہے کہ یہ عمل خواتین اور مردوں کے گنج پن کے لیے بھی یکساں مفید ثابت ہو سکتا ہے۔

 

تحقیق کے نتیجے میں جاری کی گئی رپورٹ کے مطابق 18 سے 20 سال کی عمر کے دوران 16 فیصد جبکہ 40 سے 49 سال کی عمر کے درمیان تقریباً 53 فیصد افراد کے بال جھڑنا شروع ہو جاتے ہیں اور 35 سال کی عمر تک دو تہائی مرد بالوں کے جھڑنے کے مسائل سے دو چار ہوتے ہیں۔

 

’امیریکن ہیئر لاس ایسو سی ایشن‘ کا کہنا ہے کہ اس مرض سے کروڑوں افراد متاثر ہو رہے ہیں جبکہ اس مسئلے کے حل کے لیے محققین بھی پریشان دکھائی دیتے ہیں کہ اس کا کیا علاج ہو سکتا ہے۔خواتین اور مردوں میں بال جھڑنے کے عمل ’ایلوپیشیا ‘ کہلاتا ہے، ایلو پیشا کے اسباب کے مطابق ایسا اس لیے ہوتا ہےکہ بالوں کی جڑوں کے نیچے خون کی باریک شریانوں میں خون کی ترسیل صحیح سے نہیں ہو پاتی ہے جس کے نتیجے میں بالوں کو مطلوبہ غذائیت، منرلز اور وٹامنز بھی نہیں مل پاتے ہیں آ اکسیجن کی فراہمی بھی رُک جاتی ہے، ایسے میں بالوں کے جھڑنے کا آغاز ہو جاتا ہے اور اکثر افراد نوجوانی میں ہی گنج پن کا شکار ہونے لگتے ہیں۔

 

ریسرچرز کے مطابق بالوں کوجھڑنے اور گنج پن سے بچاؤ کے لیے بیرونی علاج ’کیمیکل کمپاؤنڈ مینوکسیڈل ‘ اور سرجیکل علاج موجود ہے جس میں بالوں کے کمزور فالیکلز کا علاج کیا جاتا ہے۔’اے سی ایس نینو‘ میں شائع ہونے والی ایک تحقیق میں سائنسدانوں کی جانب سے بالوں کو جھڑنے اور گنج پن کو روکنے کے لیے نیا علاج متعارف کروایا گیا ہے جو کہ ’سیرم نینو پارٹیکلز ‘ پر مشتمل ہے جس کے تحت سر کی جلد، بے جان اور کمزور جِلد پر کام کیا جائے گا، اسے مضر صحت مادوں اور اجزاء سے پاک کر کے صحت مند بنایا جائے گا تا کہ جِلد میں آکسیجن صحیح سے سرایت کر سکے۔

 

اس علاج میں نینو پارٹیکلز پر مشتمل سیرم میں لیپیڈ کمپاؤنڈز کا استعمال کیا جائے گا، اس تحلیل ہونے والے محلول کو سر کی جِلد میں پہنچانے کے لیے مائیکرو نیڈلز یعنی انجیکشنز کا سہارا لیا جائے گا۔سائنسدانوں کے مطابق انہوں نے یہ تحقیق چوہوں پر کی ہے، چوہوں پر اس تحقیق کے واضح مثبت نتائج دیکھنے کو ملے ہیں، نینو پارٹیکلز پر مشتمل سیرم اور لیپیڈز کمپاؤنڈز نے چوہوں کی جلد میں خون کی باریک شریانوں کو متحرک بنایا اور اُن میں بالوں کی افزائش دیکھنے میں آئی ہے۔محققین کے مطابق یہ تحقیق تا حال صرف چوہوں پر کی گئی ہے مگر اُن کی جانب سے اس بات کا بھی قوی امکان ظاہر کیا جا رہا ہے یہ علاج انسانوں (مرد و خواتین) کے لیے بھی یکساں مفید ثابت ہوگا۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔