ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ زیادہ پانی پینے سے ہارٹ فیل کے خطرات کو کم کیا جاسکتا ہے۔ایک حالیہ طبی تحقیق کے مطابق زیادہ پانی پینے سے جسم کی ضرورت کے مطابق پانی کی موجودگی سے دل کے کام کرنے اور جسم کے اہم اعضا کو مناسب مقدار میں خون کی فراہمی ممکن ہوتی ہے اور اس کے نتیجے میں دل بالکل درست کام کرتا ہے اور ہارٹ فیل جیسی کیفیت کے خطرات کو کم کیا جاسکتا ہے۔

ماہرین کا مزید کہنا تھا کہ زندگی بھر مناسب مقدار میں پانی پینے سے نہ صرف اہم اعضا درست کام کرتے ہیں بلکہ مستقبل میں بھی امراض قبل کے امکانات کو کم کیا جاسکتا ہے۔اس حوالے سے اس تحقیقی ٹیم نے شرکا پر متعدد کلینیکل اقدامات کا جائزہ لیا کہ کس طرح ہائیڈریشن (جسم میں پانی کے مناسب مقدار کی موجودگی) کا امراض قلب سے تعلق جڑا ہے۔

یہ تحقیق یورپین ہارٹ جرنل میں شائع ہوئی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ ہارٹ فیل، ایک ایسی کیفیت ہے جس میں دل جسم کی ضرورت کے مطابق مناسب مقدار میں خون کی فراہمی میں ناکام رہتا ہے۔تحقیق کے مطابق امریکا میں 62 لاکھ افراد اس کیفیت سے متاثر ہوئے۔