• 425
    Shares

لکھنؤ : اتر پردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے اتوار کو کہا ہے کہ ریاست میں زندگی بچانے والی ریمیڈیسور انجکشن کی کوئی کمی نہیں ہے .مسٹر یوگی نے ٹیم 11 کے ساتھ ایک جائزہ میٹنگ میں کہا کہ یہاں ریمیڈیسور جیسی زندگی بچانے والی دوا کی فراہمی ریاست میں دی جارہی ہے ۔ روزانہ تقریبا 18000 سے 20000 کی موصول ہو رہی ہے . اتر پردیش کی ضرورت کو دیکھتے ہوئے مرکز نے ریاست کے لئے ریمیڈیسورانجیکشن کا الاٹمنٹ بڑھا کر 160000 کردیا ہے ۔ اس کے علاوہ مختلف مینوفیکچرر کمپنیوں سے براہ راست بات چیت کرتے ہوئے اس زندگی بچانے والی مانی جارہی دوا کی مناسب دستیابی کو یقینی بنائی جائے ۔انہوں نے کہا کہ حکومت کے کسی بھی کووڈ کے لئے وقف اسپتال میں ریمیڈیسیور انجکشن کی کوئی کمی نہیں ہے . مریضوں کو سرکاری اسپتالوں میں مریضوں کو مفت دی جارہی ہے اگر نجی ہسپتال میں ریمیڈیسور کی ضرورت ہوتی ہے تو اسے مرکزی حکومت کی طرف سے پرمٹ کی شرح پر فراہم کی جائے گی۔ ریمیڈیسور کی طلب کی فراہمی کی ترسیل کے نظام کا جائزہ لیا جائے ۔ اس دوا کی تقسیم کا نظام شفاف ہو۔مسٹر یوگی نے کہا کہ اتر پردیش پہلی ریاست ہے جہاں 03 کروڑ 97 لاکھ کووڈ ٹیسٹ کیا گیا ہے . یہ ہماری اہلیت اور عزم کا ثبوت ہے . تمام لیبارٹریوں کی صلاحیت کو دوگنا کرنے کی ضرورت ہے ۔

کورونا مریضوں کو فوری طور پر داخل کریں اسپتال : یوگی
لکھنؤ : عالمی وبا کورونا سے نمٹنے کے لئے اتر پردیش میں آکسیجن اورریمڈیسیور سمیت دیگر ادویات کے وافر ذخائر کا دعویٰ کرتے ہوئے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا کہ کووڈ مریضوں کے علاج میں سرکاری اور غیر سرکاری اسپتالوں میں لا پرواہی نہیں برتی جائے ۔ کورونا مریضوں کے علاج کے اخراجات ضابطوں کے تحت سرکا ر برداشت کرے گی۔ مسٹر یوگی نے اتوار کو ٹیم 11 کے ساتھ کورونا کے انتظامات کا جائزہ لیتے ہوئے کہا گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ریاست میں 35614 نئے کیسز سامنے آئے ہیں ، جبکہ 25633 افراد صحتیاب ہوئے ہیں ۔ اس طرح سے ریاست میں اب تک 7.77 لاکھ سے زیادہ افراد کووڈ انفیکشن سے نجات پا چکے ہیں ۔ یہ خوشگوار صورتحال ‘ دوائی بھی کڑائی ’ کے فارمولہ کو موثر انداز میں نافذ کرنے کا نتیجہ ہے ۔ انہوں نے کہاکہ ڈی آر ڈی او کے اشتراک سے لکھنؤ اور وارانسی میں قائم کیا جانے والا تمام سہولتات سے لیس کووڈ اسپتال بہت جلد چالو ہو جائے گا ۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔ 


اپنی رائے یہاں لکھیں