ریاض : سعودی عرب کی وزارت توانائی میں ذمے دار ذرائع کے بیان کے مطابق کل جمعرات کے روز صبح 4:40 پر ریاض میں پٹرول ریسائیکلنگ ریفائنری کو ریمورٹ کنٹرولڈ ڈرون طیارے کے ذریعہ حملے کا نشانہ بنایا گیا۔ حملے کے نتیجے میں چھوٹے حجم کی آگ بھڑک اٹھی جس پر فوری طور پر قابو پا لیا گیا۔ حملے میں کوئی شخص ہلاک یا زخمی نہیں ہوا۔ اسی طرح ریفائنری کا کام بھی متاثر نہیں ہوا۔سعودی سرکاری خبر رساں ایجنسی SPA کے مطابق مذکورہ ذرائع نے باور کرایا ہے کہ مملکت اس بزدلانہ حملے کی شدید مذمت کرتی ہے۔ ساتھ یہ بھی واضح کر دینا چاہتی ہے کہ سعودی عرب کے مختلف علاقوں میں اہم تنصیبات اور شہری مقامات پر یہ دہشت گرد کارروائیاں نہ صرف مملکت کو بلکہ یقینا دنیا بھر میں توانائی کے شعبے کے امن اور اس کی ترسیل کے استحکام کو نشانہ بنا رہی ہیں۔ اس کے عالمی معیشت پر منفی اثرات پڑیں گے۔ذرائع نے ایک بار پھر سعودی عرب کی جانب سے عالمی ممالک اور تنظیموں کو ان دہشت گرد حملوں کے خلاف کھڑے ہونے پر زور دیا گیا ہے۔