ممبئی:21اپریل (ورق تازہ نیوز) ریاست میں کورونا کے بڑھتے ہوئے واقعات کی وجہ سے ریاستی حکومت نے پابندیاں سخت کردی ہیں۔

وزیر صحت راجیش ٹوپے نے مطلع کیا تھا کہ جلد ہی ریاست میں مکمل لاک ڈاون کا اعلان کیا جائے گا۔ نیز وزیر اسلم شیخ نے مکمل لاک ڈاو¿ن کا اشارہ دیا تھا۔ اسلئے شب ریاست کے چیف سیکریٹری نے نئی پابندیوں کااعلامیہ جاری کیاہے ۔

جس کے مطابق جمعرات 22اپریل کی آدھی رات سے ریاست میں پبلک ٹرانسپورٹ خدمات پر پابندیاں عائد رہیں گی۔ اسی کے مطابق پبلک ٹرانسپورٹ خدمات کے استعمال کے لئے ضوابط جاری کردیئے گئے ہیں۔ لہذا ، لوکل ٹرین ، میٹرو اور مونو خدمات عوام کے لئے بند ہیں۔

منگل کو کابینہ کے اجلاس میں ، تمام وزراء نے کورونا کو روکنے کے لئے لاک ڈاون کا اہم مطالبہ کیاتھا۔ ریاست میں سخت لاک ڈاو¿ن کی ضرورت کا ان سب نے اظہار کیا ہے۔ تاہم ، اگر ٹرین بس کو مکمل طور پر روک دیا گیا تو ، اس سے ضروری خدمات متاثر ہوسکتی ہیں ۔ وزیر اعلی ادھو ٹھاکرے نے لاک ڈاو¿ن کا فیصلہ کیا ہے۔ آج وزیراعلیٰ عوام سے خطاب کرنے والے تھے لیکن ناسک سانحہ کی وجہ سے خطاب منسوخ کردیاگیا ۔

حکومت کے نئے ضوابط کے مطابق ، یہ ضابطے 22 اپریل 2021 کی شام 8 بجے سے یکم مئی کی صبح 7 بجے تک لاگو ہوں گے۔ سرکاری دفاتر میں صرف 15 فیصد ملازمین ہی موجود رہیں گے ۔ قابل ذکر بات یہ ہے کہ پبلک ٹرانسپورٹ بھی عوام کے لئے بند کردی گئی ہے۔ حکم کے مطابق ، نجی بس خدمات کو صرف ضروری خدمات یا طبی سہولیات کے لئے استعمال کیا جانا چاہئے۔

شادی کی تقریب میں قواعد کی خلاف ورزی کرنے پر 50 ہزار جرمانہ عائد ہوگا ۔شادی میں صرف 25 افراد کی اجازت ہے۔ انٹر ڈسٹرکٹ سفرکی اجازت صرف ضروری خدمات کورہے گی ۔

بین ضلع نقل و حمل کے لئے بھی قواعد وضع کردیئے گئے ہیں۔ اسی مناسبت سے سرکاری گاڑیوں میں سفر کرنے والوں کو شناختی کارڈ دیکھنے کے بعد پاس جاری کیا جانا چاہئے۔ نیز میڈیکل فیلڈ میں ملازمین کو متعلقہ محکمہ کی طرف سے پاس جاری کرے ۔ نیز ،لوکل خدمات کو عوام کے لئے بند کردیا گیا ہے اور بسوں میں 50 فیصد سے زیادہ مسافروں کو نہیں لے جایاجاسکتا ہے۔