کانگریس نے رافیل فائٹر جیٹ کی خریداری کے معاہدے میں درمیانی شخص کو دی جانے والی ادائیگی پر حکومت کو نشانہ بنایا ہےکانگریس کے ترجمان رندیپ سرجے والا نے پیر کو کہا کہ ملک کا 7000 کروڑ کا سب سے بڑا دفاعی اسکینڈل ایک بار پھر کھل گیا ہے۔ہم یہ نہیں کہہ رہے ہیں ، فرانس کی تحقیقات کہہ رہی ہے۔یہ مڈل مین کا کردار تھا۔ فرانس کی تحقیقات سے یہ بات ثابت ہوگئی ہے۔کانگریس نے کہا کہ ایف اے اے کے انکشاف کے بعد کیا وزیر اعظم اب ملک کو جواب دیں گےسرجے والا نے کہا کہ اگر مودی 2019 میں دوبارہ منتخب ہو گئے تو اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ دفاعی معاہدے میں دلالی کا سوال ختم ہو گیا ہے۔اب نئے ثبوت آ گئے ہیں۔حکومت سے حکومت کے معاہدے میں مڈل مین کہاں آئے۔ملک کے قانون کا کہنا ہے کہ ایسے معاملے میں کارروائی کی جائے گی اور کمپنی کو بلیک لسٹ کردیا جائے گا۔


اپنی رائے یہاں لکھیں