فرانسیسی میڈیا کے دعوے پر کانگریس نے مسئلہ دوبارہ اٹھایا
نئی دہلی : کانگریس نے کہا ہے کہ تازہ ترین انکشافات سے یہ معلوم ہوا ہے کہ 60 ہزار کروڑ کے رافیل طیاروں کی خریداری میں بڑے پیمانے پر دلالی دی گئی ہے اور اس میں حکومت نے اپنے سرمایہ دار دوستوں کو فائدہ پہنچانے کے لئے کام کیا ہے ۔ اس لئے وزیراعظم نریندر مودی کو تازہ انکشافات کے بارے میں وضاحت پیش کرنی چاہئے۔ کانگریس کے میڈیا انچارج رندیپ سنگھ سرجے والا نے پیر کو یہاں پارٹی ہیڈ کوارٹر میں ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ فرانسیسی میڈیانے دعوی کیا ہے کہ 2016میں جب ہندوستان۔ فرانس کے درمیان رافیل لڑاکا طیاروں کا معاہدہ ہوا تھا، اس معاہدے کے بعد ایک ہندوستانی کمپنی نے اس خریداری میں ’مڈل مین‘ کی حیثیت سے دس 10 لاکھ یورو کی دلالی لی تھی۔ انہوں نے بتایا کہ رافیل سودے میں دلالی کا انکشاف اس وقت ہوا جب فرانسیسی اینٹی کرپشن بیورو نے طیارہ ساز کمپنی ڈسالٹ کے اکاؤنٹس کا آڈٹ کیا۔ بتایا گیا کہ رافیل طیارے کے معاہدے سے متعلق 2016 میں پوری کارروائی کی تکمیل کے بعد یہ رقم کمپنی کے ذریعہ ہندوستان میں ایک مڈل مین کو بطور تحفہ دی گئی تھی۔ کانگریس کے ترجمان نے بتایا کہ 23 ستمبر 2016 کو آڈٹ سے پتہ چلاکہ کمپنی نے 10 لاکھ یورو ادا کیے تھے اور انہیں تحفہ بتایا گیا تھا۔


اپنی رائے یہاں لکھیں