Waraqu E Taza Online
Nanded Urdu News Portal - ناندیڑ اردو نیوز پورٹل

راج بھون کی زنگ خوردہ توپوں سے کوئی حملہ کرنا چاہتا ہے تو ہمارا بھی توپ خانہ تیار ہے: سنجے راؤت

IMG_20190630_195052.JPG

ممبئی : 26 مئی (یو این آئی) مہاراشٹڑا میں سیاسی سرگرمیوں میں اچانک اضافہ نیز حسبِ اقتدار اور حسبِ اختلاف قائدین کے درمیان جاری تیکھی نوک جھونک ، بیان بازی ، تنقید اور الزام تراشیوں کے بیچ "مہاراشٹرا حکومت خطرے میں” ہونے کی قیاس آرائیوں کو مکمل طور پر رد کرتے ہوئے شیوسینا کے رکن پارلیمنٹ سنجے راوت کہا مہاراشٹرا میں مہاوکاس اگھاڑی کی حکومت کو 5 سالوں تک کوئی خطرہ نہیں ہے اور جو کوئی ایسا خطرہ پیدا کرنے کی فکر میں ہے وہ خود ہی گڑھے میں گریں گے۔

مہاراشٹرا میں سیاسی ہلچل اور گھما گھمی دیکھنے کو مل رہی ہے ۔ جس طرح کورونا وائرس کے اثرات تیزی سے بڑھ رہے ہیں اسی طرح سیاسی سرگرمیاں دیکھی جا رہی ہیں۔ کورونا وائرس کے خلاف جنگ میں حکومت کی ناکامی کو لیکر حسبِ اختلاف کےقائدین کی راج بھون جا کر گورنر سے شکایت کرنا، بھارتئی جنتا پارٹی کی جانب سے "میرا گھرـــ میرا میدان” کے تحت ” مہاراشٹرا بچاو” مہم چلانا۔ گورنر کی جانب سے بلائی گئی میتنگ اور اس میں وزیزاعلیٰ کی عدم شرکت،اور اسکے بعد شیوسینا کے سنجے راؤت اور راشٹروادی کانگریس کے صدر شرد پوار کی راج بھون جا کر گورنر سے ملاقات۔اور بعد ازاں بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ نارائن رانے کی گورنر سے ملاقات۔ اسی طرح شرد پوار کی "ماتو شری ” بنگلے پر جا کر ادھو ٹھاکرے سے تفصیلی گفتگو کے درمیان یہ قیاس آرائیاں زور پکڑ رہی ہیں کی مہاراشٹرا میں صدر راج لاگو ہونے جا رہا ہے۔

ان تمام قیاس آرائیاں کو رد کرتے ہوئے سنجے راؤت نے اپنے ایک ٹوئٹ میں کہا کہ راج بھون کے زنگ خوردہ توپوں سے کوئی حملہ کرنا چاہتا ہے تو ہمارا بھی توپ خانہ تیار ہے۔

انھوں نے کہا کہ ادھو ٹھاکرے کے طریقے عمل سے متعلق شرد پوار کی ناراضگی کی کوئی حقیقت نہیں ہے ، تین الگ الگ پارٹیاں ساتھ میں ہیں۔ کچھ سوچ الگ ہو سکتی ہے مگر فیصلہ لینے کا اختیار صرف ایک ادھو ٹھاکرے کو ہی ہے۔ افواہ کی دھول چھٹنےکے بعد کیا باتیں ہوئی اس سے عوام کو واقف کراونگا۔اس وقت انتا واضح کر دینا چاہتا ہوں کہ مہاراشٹر حکومت مستحکم ہے اور اسے کوئی خطرہ نہیں ہے۔راؤت نے بالواسطہ طور پر ممکنہ سیاسی بحران کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ، "اپوزیشن کو ادھو ٹھاکرے حکومت کو گرانے کے لئے کرونا کے لئے ایک ویکسین اور ایک خوراک دریافت نہیں کی جاسکتی ہے … لیکن کوششیں جاری ہیں۔” تاہم ، اسی سانس میں انہوں نے متنبہ کیا کہ "ریاست کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کی کوئی بھی کوشش ردعمل کا نشانہ بن سکتی ہے” اور اپوزیشن کو "سنگرودھ” میں جانے کا مشورہ دیا۔راوت نے حکومت کی قسمت پر منڈلانے والی تمام افواہوں کو "خواہش مندانہ سوچ” کے طور پر مسترد کرتے ہوئے کہا کہ "حکومت مضبوط ہے ، اور پریشانیوں کی کوئی وجہ نہیں ہے”۔