راجہ سنگھ کی رسول اللہ ﷺ پر ہرزاسرائی

19

کچھ گھنٹے قبل تیلنگانہ کے بی جے پی کے ایم ایل اے راجہ سنگھ نے رسول اللہ ﷺ کی شان اقدس میں تاریخ کی اب تک کی سب سے توہین آمیز گستاخی کی ہے جس کو دہرانے کے لیے نہ قلم میں ہمت ہے اور نہ زبان میں طاقت اور نہ ہی کان میں سکت کہ اس کو سنا جا سکے، فیس بک پر اپلوڈ ویڈیو جیسے ہی نظروں سے گزرا تو راجہ سنگھ کے ویڈیو کی شروعات ہی ایک فرد کو گالی گالی سے ہوئی اس کے بعد میرے پورے بدن میں کپکپی طاری ہوگئی بس یہ کہ کچھ سمجھ میں نہ آیا۔نپر شرما کی آپؐ کی شان میں گستاخی اس کا بس دس فیصد تھی،ایک ایسے وقت میں جبکہ دہلی میں ایک دن قبل ہی نمائندہ اجلاس امت کے نام سے ایک کانفرنس ہوئی جس میں یہ قرارداد پاس کی گئی کہ رسول اللہ ﷺ کی شان میں کسی بھی طرح کی گستاخی کو برداشت نہیں کیا جائے گا اس کے محض کچھ ہی گھنٹے بعد راجہ سنگھ ملعون و بد بخت نے نہ صرف رسول اللہ ﷺ کی روح کو تکلیف پہنچائی ہے بلکہ ساری دنیا کے مسلمان اور بھارت کی نمائندہ مسلم قیادت کو چیلینج کیا ہے۔اب جو مسلم قیادتیں دہلی میں جمع ہیں انہیں چاہیے کہ اپنی قرارداد کو پورا کرکے دکھائے جب تک راجہ سنگھ گرفتار نہیں ہوتا ان کے لیے زیب نہیں دیتا کے وہ اپنے گھروں کو اتحاد امت کی کوشش کی خوشخبری لیکر پہنچیں۔ لیکن بخدا یہ گرفتاری بھی اس کے جرم کا ازالہ نہیں ہو سکتی اور امت کو بھی یہ بات سمجھ لینی چاہیے کہ گساخ رسولؐ کو معاف کرنے والی پالیسی پر بحث اور نرم رویہ نے آج سارے ملعون صفت حیوانوں کو یہ موقع دیا ہیکہ وہ جب چاہے دنیا کی سب سے پاکباز و محترم ہستی ہی کو نشانہ بناکر اپنے بغض و عناد کو اپنی گندی زبانوں سے اگل رہے ہیں،
اِنَّ الَّذِیۡنَ یُؤۡذُوۡنَ اللّٰہَ وَ رَسُوۡلَہٗ لَعَنَہُمُ اللّٰہُ فِی الدُّنۡیَا وَ الۡاٰخِرَۃِ وَ اَعَدَّ لَہُمۡ عَذَابًا مُّہِیۡنًا ﴿سورۃ الأحزاب ۵۷﴾
جو لوگ اللہ اور اس کے رسول ( صلی اللہ علیہ وسلم ) کو اذیت دیتے ہیں ان پر دنیا اور آخرت میں اللہ نے لعنت فرمائی ہے اور ان کے لیے رسوا کن عذاب مہیا کر دیا ہے۔

✍:پرویز نادر