گرمی کا موسم آچکا ہے اور شہری ابھی سے بے حال ہورہے ہیں کیوں کہ مارچ کے مہینے میں ہی سورج کی تیز شعاعوں نے عوام پر اثر دکھانا شروع کردیا ہے۔ محکمہ موسمیات بھی آنے والے دنوں میں گرمی بڑھنے کی پیشن گوئی کرچکے ہیں اس لئے ہم اپنے قارئین کو چند ایسے طریقے بتا رہے ہیں جن سے وہ ہیٹ ویو سے خود کو محفوظ رکھ سکتے ہیں۔

ٹھنڈے پانی میں پیر بھگونا
اکثر لوگوں کو گرمی سے پیر میں جلن کی شکایت محسوس ہوتی ہے اس کا ایک حل یہ ہے کہ رات کو سونے سے پہلے پیروں کو ٹھنڈے پانی میں بھگوئیں۔ اس عمل سے پیروں پر جما پسینہ بھی صاف ہوگا اور جلد کو سکون ملے گا۔ نیز ایسے مرد و خواتین جو دن بھر دفاتر میں جوتے پہنتے ہیں ان کو یہ عمل ضرور کرنا چاہئیے۔

ہلکے موزے
پیروں کو محفوظ رکھنے کے لئے کچھ لوگ موزے گرم موسم میں بھی پہنتے ہیں لیکن اس بات کا خیال نہیں رکھتے کہ ان کے موزے اونی ہیں یا سوتی۔ موسم تبدیل ہونے کے بعد موزے کا انتخاب بھی سوچ سمجھ کر کریں اور سوتی کپڑے کے موزے پہنیں۔

ایک کپڑا ساتھ رکھیں
کوشش کریں کہ گھر سے غیر ضروری طور پر باہر نہ نکلیں لیکن اگر ایسا کرنا ناگزیر ہو تو ایک کپڑا ضرور ساتھ رکھیں جسے وقتاً فوقتاً گیلا کرکے چہرہ اور بال پونچھ سکیں اس سے فوری طور پر گرمی کا احساس کم کرنے میں مدد ملے گی۔

یہ چیزیں ضرور ساتھ رکھیں
دھوپ کے چشمے، ہیٹ ، دستانے اور سن بلاک کا استعمال لازمی کریں اور گھر سے باہر نکلتے ہوئے یہ چیزیں اپنے ساتھ لے کر نکلیں اس کے علاوہ ایک پانی کی بوتل بھی لازمی اپنے پاس رکھیں۔