آکسیجن کی بروقت ریفل نہ ہونا سانحہ کی اہم وجہ: میڈیکل ڈائرکٹر
نئی دہلی: دہلی کے روہنی میں واقع جے پور گولڈن ہاسپٹل میں آکسیجن کی کمی کے سبب 25 مریضوں کی رات دیرگئے موت واقع ہو گئی۔ ہاسپٹل کے میڈیکل ڈائریکٹر ڈاکٹر ڈی کے بالوجا نے کہا کہ حکومت کی طرف سے ہاسپٹل کے لئے 3.5 میٹرک ٹن آکسیجن الاٹ کی گئی ہے، جس کو کل سے پھر ریفل کیا جانا تھا لیکن دیر رات تک بھی ریفل نہیں ہوئی۔ جمعہ کی رات محض 1500 لیٹر آکسیجن ہی ریفل ہو پائی اس کے سب آکسیجن کا اسٹاک ختم ہو گیا اور 25 کورونا کے مریضوں نے دم توڑ دیا۔ ہاسپٹل نے بتایا کہ تاحال وہاں کورونا کے 215 مریض زیر علاج ہیں، جنہیں آکسیجن کی ضرورت ہے۔ فوت ہونے والے تمام مریضوں کی حالات انتہائی نازک تھی۔ ہاسپٹل انتظامیہ مدد کے لیے دہلی ہائی کورٹ سے رجوع ہوا ہے اور بتایا کہ آنے والے چند منٹوں میں بڑا انسانی المیہ ہونے والا ہے ہاسپٹل میں 25 مریض پہلے ہی فوت ہوچکے ہیں ۔ انتظامیہ نے زندگیاں بچانے کی بھی اپیل کی ہے ۔ جئے پور گولڈن ہاسپٹل دہلی کا دوسرا ہاسپٹل ہے جس میں صبح میں آکسیجن کی قلت سے متعلق SOS روانہ کیا تھا ۔ قبل ازیں مولچند ہاسپٹل نے بھی ایک ٹوئیٹ کے ذریعہ فوری مدد کے لیے وزیراعظم نریندر مودی ، چیف منسٹر دہلی اروند کجریوال اور لیفٹننٹ گورنر دہلی انیل بائیجل کو ٹوئیٹ کیا اور بتایا کہ 130 سے زیادہ کورونا مریض تشویش ناک حالت میں ہے ۔ ۔


اپنی رائے یہاں لکھیں