دہلی میں کورونا پازیٹیو ڈاکٹر سے علاج کروانے والے 900 افراد کی جانچ ہوگی

نئی دہلی۔ شمال مشرقی دہلی کے موج پور علاقے میں محلہ کلینک کے ایک ڈاکٹر سے علاج کرانے کے معاملے میں تقریباََ 900 لوگوں کو قرنطینہ میں رکھا جائے گا۔ سعودی عرب سے آئی ایک خاتون نے محلہ کلینک کے ڈاکٹر سے علاج کرایا تھا ۔ یہ خاتون کورونا وائرس سے متاثر تھی جس سے ڈاکٹر بھی اس کی زد میں آ گئے ۔ بعد میں ڈاکٹر کی اہلیہ اور بیٹی بھی متاثر ہو گئی۔ ڈاکٹر سے 12 سے 18 مارچ کے درمیان علاج کرانے والے تقریبا 900 لوگوں کی شناخت کر کے انہیں قرنطینہ میں رکھا جا رہا ہے۔
شاہدرہ کے ایس ڈی ایم نے کہا ہے کہ جو لوگ اس محلہ کلینک میں 12 مارچ سے 18 مارچ تک آئے ہیں ، وہ 15 دن تک اپنے گھر میں خود کو یکسر الگ کر لیں۔ نیز ، کسی بھی قسم کی پریشانی کی صورت میں فوری طور پر اسپتال جانے کی ہدایت کی گئی ہے۔ بدھ کے روز اس کی اطلاع ملی ہے۔ لیکن اب تک یہ معلوم نہیں ہوسکا کہ کورونا پازیٹیو یہ مریض بیرون ملک کے سفر پر گیا تھا یا نہیں۔

♨️Join Our Whatsapp 🪀 Group For Latest News on WhatsApp 🪀 ➡️Click here to Join♨️

WARAQU-E-TAZA ONLINE

I am Editor of Urdu Daily Waraqu-E-Taza Nanded Maharashtra Having Experience of more than 20 years in journalism and news reporting. You can contact me via e-mail waraquetazadaily@yahoo.co.in or use facebook button to follow me