دہلی: موج پور میں سی اے اے حامیوں کا ہنگامہ، بی جے پی رہنما کپل مشرا پر بھڑکانے کا الزام

شہریت ترمیم قانون کو لے کر دہلی کے موج پور میں دو گروپوں میں تصادم ہوا، اس دوران کچھ لوگوں نے پتھراؤ کر دیا، پولیس نے پہلے سمجھانے کی کوشش کی، جب دونوں گروہ نہیں مانے تو پولیس نے ہنگامہ کر رہے لوگوں سے جانے کے لئے کہا۔ اس کے بعد بھی جب دونوں گروہ نہیں مانے تو پولیس نے حالات پر قابو پانے کے لئے آنسو گیس کے گولے چھوڑے۔ ادھر، کشیدگی بڑھنے پر موج پور-بابرپور میٹرو اسٹیشنوں کو بند کر دیا گیا۔

بی جے پی رہنما کپل مشرا پر الزام ہے کہ انہوں نے علاقے میں کشیدگی بڑھانے کا کام کیا ہے، جعفرآباد میں مظاہرہ کے درمیان بی جے پی لیڈر کپل مشرا نے ٹوئٹ کر اپنے حامیوں کو جعفرآباد مظاہرہ کے خلاف موج پور میں بلایا تھا، کپل مشرا نے ٹوئٹ کر کہا کہ ’’آج ٹھیک 3 بجے جعفرآباد کے جواب میں جعفرآباد کے ٹھیک سامنے موج پور چوک کی ریڈ لائٹ پر سی اے اے کی حمایت میں ڈنکے کی چوٹ پر ہم لوگ سڑک پر اتریں گے آپ تمام لوگ مدعو ہیں‘‘۔

♨️Join Our Whatsapp 🪀 Group For Latest News on WhatsApp 🪀 ➡️Click here to Join♨️


کپل مشرا نے آگے لکھا، ’’موج پور چوک پر جعفرآباد کے سامنے قد بڑھا نہیں کرتے، ایڑیاں اٹھانے سے سی اے اے واپس نہیں ہوگا، سڑکوں پر بيوياں بٹھانے سے دہلی میں دوسرا شاہین باغ نہیں بننے دیں گے‘‘۔ کپل مشرا کے اس ٹوئٹ کے بعد بڑی تعداد میں ان کے حامی موج پور میں پہنچے اور موج پور چوراہے پر جام لگا دیا، سی اے اے کی حمایت میں یہ لوگ جے شری رام کے نعرے لگا رہے تھے، یہ بھی الزام ہے کہ انہوں نے ہی پہلے پتھراؤ شروع کیا اور پھر دیکھتے ہی دیکھتے ماحول کشیدہ ہو گیا۔


وہیں، جوائنٹ پولیس کمشنر (مشرقی رینج) آلوک کمار نے بتایا کہ پولیس پر بھی پتھراؤ کیا گیا، ہم نے صورتحال پر قابو پا لیا ہے، جائے حادثہ پر کافی پولیس اہلکار تعینات کر دیئے گئے ہیں اور فلیگ مارچ جاری ہے‘‘۔


اس سے پہلے گزشتہ دیر رات (سنیچر) جعفرآباد میٹرو اسٹیشن کے باہر شہریت ترمیم قانون کے خلاف خواتین نے احتجاجی مظاہرہ شروع کیا تھا۔ صبح ہوتے ہوتے سینکڑوں کی تعداد میں خواتین سی اے اے کے خلاف ہو رہے مظاہرہ کے لئے میٹرو اسٹیشن پر جمع ہو گئیں، مظاہرہ کو دیکھتے ہوئے بڑی تعداد میں پولیس فورس کی تعیناتی کی گئی ہے۔

یہ ایک سینڈیکیٹیڈ فیڈ ہے ادارہ نے اس میں کوئی ترمیم نہیں کی ہے. – بشکریہ قومی آواز بیورو

WARAQU-E-TAZA ONLINE

I am Editor of Urdu Daily Waraqu-E-Taza Nanded Maharashtra Having Experience of more than 20 years in journalism and news reporting. You can contact me via e-mail waraquetazadaily@yahoo.co.in or use facebook button to follow me

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔