دہلی فرقہ وارانہ فساد کے دوران کیجری وال کی مجرمانہ خاموشی :نسیم خان

ممبئی :۱؍مارچ (یو این آئی )سینئر کانگریس لیڈر و سابق وزیر محمد عارف نسیم خان نے دہلی کے فرقہ وارانہ فساد کے دوران دہلی کے وزیر اعلی کیجری وال کی مجرمانہ خاموشی کی سخت لفظوں میں مذمت کی اور کہا ہے کہ دہلی جل رہا تھا اس وقت کیجری وال نے کس کے اشاروں پر خاموشی اختیار کر رکھی تھی ملک کی عوام یہ جانناچاہتی ہے ۔


انہوں نے اپنے بیان میں کہا کہ کیجری وال نے مرکزی وزیر امیت شاہ سے ملاقات کی تھی اس کے بعد انہوں نے آگ میں جھلس رہی دہلی کے معاملے میں اپنی آنکھیں موند لی تھیں ۔


نسیم خان نے کہا کہ کیجری وال کا یہ کردار رہا ہے کہ انہوں نے ملک کے کسی بھی حصہ میں ہونے والے فرقہ وارانہ فسادات کے معاملے میں فوری ردعمل ظاہر کیا ہے لیکن اپنی ہی ریاست میں ہونے والے فسادات پر وہ خاموش کیوں رہے ۔
نسیم خان نے کہا کہ فسادات پر معاوضہ کا اعلان کرنے سے ہی کسی ماں کو اس کا بیٹا نہیں مل جاتا اور جو لوگ فساد میں متاثر ہوئے ہیں ان کے دوبارہ صحیح راستے پر آنے میں بہت دیر لگ جائے گی۔