دہلی تشدد: شمال مشرقی دہلی کے فساد متاثرین سے راہل گاندھی کی ملاقات

0 0

نئی دہلی: کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے بدھ کے روز شمال مشرقی دلی کے برج پوری علاقے کا دورہ کیا اور حال ہی میں ہوئے فساد کے متاثرین سے مل کر ان کے دکھ درد کے بارے میں معلومات حاصل کیں۔


راہل گاندھی کئی سینئر لیڈروں کے ساتھ تشدد زدہ علاقے برج پوری پہنچے اور تشدد میں جلائے گئے گھروں، اسکولوں، دکانوں وغیرہ کا دورہ کیا ۔ علاقے میں آگ زنی کے سبب جل کر خاک ہوئے اسکول کی عمارت کی حالت دیکھتے ہوئے راہل گاندھی نے جذباتی ہوکر کہا کہ ’’یہ اسکول دلی کا مستقبل ہے اور نفرت اور تشدد نے اسے برباد کردیا۔ اسکولوں میں ملک کا مستقبل ہے لیکن تشدد زدہ علاقوں میں اسکولوں کو نفرت اور تشدد نے جلاکر خاک کردیا ہے۔ اس تشدد سے مادر وطن کا بھلا نہیں ہوسکتا۔ اس کے لئے سب کو مل کر رہنا اور کام کرنا ہے‘‘۔

انہیں بتایا گیا کہ اس اسکول کا استعمال تشدد بھڑکانے کے لئے کیا گیا اور ہم آہنگی کا ماحول خراب کرنے میں مصروف ہزاروں فسادیوں نے اس اسکول میں کئی گھنٹوں تک قبضہ کیا اور تشدد کو انجام دیا۔ فسادیوں نے اسکول کو بھی تہس نہس کردیا اور اس کے کئی کمروں کو آگ کے حوالے کردیا تھا۔

راہل گاندھی نے کہا کہ راجدھانی میں ہوئے تشدد سے دنیا میں ہندوستان کی شبیہ خراب ہوئی ہے۔ ہندوستان کو تقسیم کیا جارہا ہے لیکن اسے نفرت کی آگ میں جھوکنے والوں کو سمجھ لینا چاہیے کہ ملک کو مل کر ہی آگے بڑھایا جاسکتا ہے کیونکہ نفرت اور تشدد سے ملک ترقی نہیں کرسکتا۔ تشدد اور نفرت تقسیم کرتے ہیں اور یہ ترقی کے دشمن ہیں۔

یہ ایک سینڈیکیٹیڈ فیڈ ہے ادارہ نے اس میں کوئی ترمیم نہیں کی ہے. – بشکریہ قومی آواز بیورو