پاکستان کے بہاولپور میں 4 ماہ سے لاپتہ نوجوان لڑکی کے کیس کا ڈراپ سین ہوگیا۔بہاولپور میں 4 ماہ قبل لاپتہ ہونے والی نوجوان لڑکی کو پولیس نے بازیاب کروالیا ہے۔

جیو نیوز سےگفتگو میں لڑکی نےکہا کہ اسے کسی نے اغوا نہیں کیا، وہ اپنی مرضی سے گئی تھی، دوست نے نکاح سے انکار کر دیا تو ایک رکشا ڈرائیور نے نکاح کی پیش کش کی جو اس نے قبول کرلی ، اب وہ اسی کے ساتھ رہنا چاہتی ہے۔

لڑکی نے عدالت میں بھی بیان ریکارڈ کرایا ہےکہ اس نے مرضی سے شادی کی ہے اور وہ والدین کےگھر نہیں رہنا چاہتی ۔

لڑکی کے والد نے بھی بیان دیا کہ اسے شادی پر اعتراض نہیں ، جس کے بعد عدالت نے لڑکی کو شوہر کے ساتھ جانےکی اجازت دے دی۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔