’دلہے نے شادی کی تقریب میں سادگی کی حد کردی‘

4,434

یمن میں اپنی نوعیت کی سب سے عجیب و غریب شادی کی تقریب میں ایک دولہے نے اپنی شادی ایک بھاری ٹرانسپورٹ ٹرک کے اندر منعقد کرنے کا فیصلہ کیا جس پر بہت سے لوگ حیران ہیں۔ دُلہے نے شادی کی تقریب کے لیے ٹرک کی عقبی باڈی کو آراستہ کیا جہاں اس کے رشتہ داراور دوست احباب بیٹھے دیکھا جا سکتا ہے۔شادی کی منفرد تقریب منعقد کرکے یمنی نوجوان نے نہ صرف اپنے اقارب کی ہمدردی حاصل کی بلکہ لاکھوں یمنی عوام میں عزت افزائی کرائی کیونکہ اس وقت یمن میں موجودہ جنگی حالات میں شادی کے اخرابات بہت زیادہ ہیں اور شادی ہالوں میں تقریبات منعقد کرنے سے قاصری ہیں۔

مہنگے شادی ہالوں کا متبادل
دولہے کے اس سماجی اقدام کی عوامی سطح پر تعریف کی گئی اور اسے سراہا گیا ہے۔ موجودہ مہنگائی اور جنگ زدہ ملک میں سادگی کے ساتھ شادی بیاہ کی تقریبات کا انعقاد ایک بہتر اور باوقار متبادل قرار دیا ہے۔موسلا دھار بارش کے نتیجے میں خیموں اور شادی ہالوں کا نقصان
صنعاء، تعز، اب اور بعض شہروں میں موسلادھار بارش کی لہر کے باعث موبائل شادی کے خیموں کو بہت نقصان پہنچا اور شادی ہالوں کی کچھ چھتیں تباہ ہوگئیں۔ ان حالات نےدولہا کو ایک طریقہ وضع کرنے پر مجبور کیا۔ مشکل حالات کے مطابق اپنی شادی کا جشن منایا مگر اس نے موسمی حالات اور مہنگائی کے پیش نظر سادگی اختیار کرنے پرمجبور کیا۔

’’ہر جگہ خوشی ہے‘‘ کا نعرہ بلند کرنے والے لوگوں کے دکھ
یمن میں سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پرجمعرات کواس شادی کی تصاویر اور ویڈیوز جاری کی گئیں۔ اس تقریب پریمنی شہریوں کی طرف سے دلہے کو داد دی گئی۔یمنی عوام جنگ سے نالاں ہیں اور وہ خوشی کے ساتھ زندگی گذارنا چاہتے ہیں۔وہ زندگی کی سختی، حالات کی تلخیوں اور غربت پر قابو پانے کے باوجود اپنی شادی کو خوشیوں کا سرچشمہ اور سادگی کے عنوان میں تبدیل کرنے میں کامیاب رہے ہیں۔دولہے کے قریبی لوگوں نے ’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ سے بات کرتے ہوئے وضاحت کی کہ جنگ کے حالات نے بہت سے لوگوں کو شادی کی تقریب میں خوشی، رونق اور سماجی ساکھ بڑھانے کے لیے اضافی اخراجات کرنے پر مجبور کردیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ دولہا دراصل اس قابل تھا گھٹن کے حالات کی روشنی میں ہال کا کرایہ فراہم کرے مگر اس نے ایک بھاری ٹرک پر سوار ہو کر شادی کی تقریب کا انتخاب کیا۔