ابوظہبی : متحدہ عرب امارات سے آنے والی پروازوں پر پابندی کے بعد دبئی جانے والے سعودی شہری واپسی کے لیے پریشان ہیں۔ ویب سائٹ کے مطابق پروازوں کی عدم دستیابی کی وجہ سے لوگ بسوں کے ذریعہ سفر کرنے پر مجبور ہیں۔ دبئی سے سعودی عرب بری سفر کی سروس حالات کی پیداوار ہے جو اس سے پہلے انتہائی محدود تھی۔سعودی حکومت کی طرف سے تین ممالک سے پروازوں پر پابندی کانفاذ آج رات 11 بجے سے ہوگا تاہم اعلان کے بعد سے لے کر اب تک مذکورہ ممالک سے واپس آنے والے شہریوں کی تعداد میں کئی گنا اضافہ دیکھا گیا ہے۔امارات میں پروازوں کی عدم دستیابی اور سیٹیں نہ ملنے کی وجہ سے سعودی عرب لے جانے والی بس سروس کا کاروبار اچانک چمک اٹھا ہے۔دبئی میں موجود ایک شہری محمد عسیری نے کہا ہے کہ ’میں 10 دن کے لیے دبئی آیا تھا اور اچانک پابندی کا فیصلہ ہوگیا‘۔’میری واپسی 10 دن بعد ہے مگر نے فوری واپسی کے لیے ایئرلائن سے رابطہ کیا مگر مجھے سیٹ نہ ملی‘۔ایک اور شہری فہد عساکر نے کہا ہے کہ ’سیٹوں کی عدم دستیابی کی وجہ سے دبئی اور دیگر شہروں سے بس سروس شروع کی گئی ہے‘۔’یہ چیز اس سے پہلے معروف نہیں تھی، لوگ واپس جانے کے لیے بس کے ذریعہ سفر پر مجبور ہیں‘۔ایک اور شہری احمد الغامدی نے کہا ہے کہ ’مجھے واپسی کی سیٹ نہیں ملی، میں ایئرپورٹ گیا جہاں واپسی کی پوری کوشش کی مگر ناکام ہوا‘۔ ’ایئرپورٹ پر ہی مجھے سعودی عرب لے جانے والی بس سروس کا پتہ چلا۔ اب میرے پاس واپسی کے لیے اس کے سو کوئی راستہ نہیں‘۔


اپنی رائے یہاں لکھیں