ناندیڑ:14مارچ (ورق تازہ نیوز) ممبئی بم دھماکے کے ملزم و بدنام زمانہ ڈان داﺅد ابراہیم پر ریاستی حکومت مہربان ہے۔ انڈر ورلڈ ڈان کی مدد سے انتہائی مہنگی زمین کوڑی کے دام مہاوکاس آگھاڑی میں اقلیتی وزیر نواب ملک کو ملی۔ اس لیے نواب ملک اور داﺅد ابراہیم کے درمیان ہونے والی مالیاتی لین دین سامنے آنے پر کارروائی کی۔ یہ کارروائی مناسب ہے ، مہاوکاس آگھاڑی حکومت بہار بنانا چاہتی ہے کیا؟ اس طرح کا سوال رکن پارلیمنٹ پرتاپ پاٹل چکھلی کر نے کیا ہے۔ اپوزیشن لیڈر دیویندر فرنویس نے اس بارے میں مکمل معلومات مرکزی تحقیقاتی مشنری کو دی تھی۔ بعد ازاں مرکزی تحقیقاتی ایجنسی اس پورے معاملہ کی تحقیقات کرکے اقلیتی وزیر نواب ملک کو گرفتار کی ہے۔ یہ گرفتاری ضوابط کے مطابق کی گئی ہے۔

مرکزی تحقیقاتی مشنری پر شک کرنے والی مہاوکاس آگھاڑی حکومت اس کے لیڈر نواب ملک کی تائید کرکے کیا پیغام دینا چاہتی ہے؟ اس طرح کا سوال رکن پارلیمنٹ چکھلی کر نے کیا ہے۔ ملک کا سب سے بڑا دُشمن داﺅد ابراہیم رئیل اسٹیٹ کے توسط سے ٹیرر فنڈنگ کرتا ہے، یہ لین دین منی لینڈرنگ کے ذریعے کیے جانے کا علم میں آنے کے بعد ای ڈی ( انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ) نے تحقیقات شروع کی۔ جس میں ممبئی بم دھماکے کے ملزم سردار شہاولی خان اور حسینہ پارکر کے مددگار سردار پٹیل کے پاس سے سالیڈس نام کی کمپنی کو مہنگی زمین انتہائی معمولی قیمت میں فروخت کی گئی۔

یہ کمپنی ریاستی وزیر نواب ملک کے رشتہ دار نے فروخت کی۔ ممبئی بم دھماکہ میں مجرمین پر ٹاڈا لاگو ہونے پر ضوابط کے مطابق مجرمین کی ساری جائیداد ضبط نہ ہو، اس کے لیے ہی مذکورہ زمین کا لین دین کیا گیا۔ جس کے بعد ممبئی میں تین بار بم دھماکے ہوئے۔ یہ بم دھماکے ٹیرر فنڈنگ کے پیسوں سے کیے گئے ہیں کیا؟ ایسا سوال رکن پارلیمنٹ چکھلی کر نے کھڑا کرتے ہوئے کہا کہ ملک کی حفاظت کے بارے میں بھی کچھ لوگ سیاست کررہے ہیں جو کافی ناگوار ہے۔