نئی دہلی ، 22 اکتوبر (یو این آئی) مرکزی وزیر برائے اقلیتی امور مختار عباس نقوی نے کہا ہے کہ حج ادا کرنے کے خواہشمند افراد کے انتخاب کا عمل ، کورونا ویکسین کی دونوں خوراکیں لگوانے اور سعودی عرب حکومت کی جانب سے حج 2022 کے وقت طے کیے جانے والے کورونا پروٹوکول ، رہنما خطوط اور میعار کے تحت ہوگا اوراس کا باضابطہ اعلان نومبر کے پہلے ہفتے میں کیا جائے گا ۔

مسٹرنقوی نے آج یہاں حج جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہا کہ حجاج کرام کو ڈیجیٹل ہیلتھ کارڈ ، ’ای مسیحا‘ ہیلتھ سہولت ، مکہ مدینہ میں قیام کرنے کی عمارت / ٹرانسپورٹ کی معلومات ہندوستان میں ہی فراہم کرنے والے ای – لگیج ٹیگنگ کی سہولت بھی فراہم کی جائے گی۔

انہوں نےکہا کہ اس بار سعودی عرب اور ہندوستان کی حکومت کے ہیلتھ اینڈ کورونا پروٹوکول کو مدِ نظر رکھتے ہوئے حج-2022 کی تیاریاں شروع کر دی گئی ہیں ۔ حج-2022 کا سرکاری اعلان نومبر کے پہلے ہفتے میں کیا جائے گا ۔ اس کے ساتھ ہی حج کے لئے آن لائن درخواستوں کاعمل بھی شروع ہو جائے گا ۔ ہندوستان کا حج 2022 کا مکمل عمل 100 فیصد آن لائن ڈیجیٹل ہوگا ۔ انڈونیشیا کے بعد سب سے زیادہ حجاج کرام ہندوستان سے جاتے ہیں ۔ مسٹر نقوی نے کہا کہ ہندوستان اور سعودی عرب میں حج -2022 پر جانے والے لوگوں کے لئے کرونا پروٹوکول اور ہیلتھ اینڈ ہائجن کےتعلق سے خصوصی ٹریننگ کا انتظام کیا گیا ہے ۔ حج -2020 میں پینڈیمک پوزیشن کے مدِ نظر قومی-بین الاقوامی پروٹوکول گائیڈ لائنزپر عمل کیا جائے گا۔

مسٹر نقوی نے کہا کہ حج 2022 کا پورا عمل ، سعودی عرب اور ہندوستان کی حکومت کی جانب سے کورونا آفت کے مدِ نظر متعین کئے جانے والے مناسب معیار ، عمر ، صحت کی صورتحال اور دیگر ضروری ہدایات کے مطابق کیا جا رہا ہے۔لوگوں کی صحت ، حفاظت اور سعودی عرب سرکار کی ہدایات کو ترجیح دینے ہوئے اقلیتی امور کی وزارت ، وزارت صحت ، وزارت خارجہ ، وزارت شہری ہوابازی ، حج کمیٹی ، سعودی عرب میں ہندوستان کا سفارت خانہ ، جدہ میں قونصل جنرل وغیرہ سے مشاورت کے بعد حج 2022 کا مکمل خاکہ طے کیا جا رہا ہے۔ مسٹر نقوی نے کہا کہ کورونا وباء اور اس کے اثرات کو مدنظر رکھتے ہوئے حج انتظامات میں اہم تبدیلیاں اور بہتری لائی گئی ہے ۔ ان میں ہندوستان اور سعودی عرب میں رہائش ، سعودی عرب میں عازمین حج کے قیام کا دورانیہ ، ٹرانسپورٹ ، صحت اور دیگر انتظامات شامل ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ’محرم‘ کے بغیر تقریبا 3000 سے زائد خواتین نے حج 2020-2021 کے لیے درخواست دی تھی ۔ بغیر ’محرم‘ حج سفر کے لئے جن خواتین نے حج-2020 اور 2021 کے لیے درخواستیں دی تھیں۔ وہ بھی حج 2022 کے لیے ویلڈ رہیں گی ۔ بغیرمحرم حج پر جانے والی تمام خواتین کو بغیر قرعہ اندازی کے حج پر جانے کے انتظامات کیے گئے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ حج جائزہ اجلاس میں حج 2022 کا ممکنہ کوٹہ ، حج ایئر چارٹر ، کورونا پروٹوکول ، ویکسینیشن ، طبی سہولت ، ہیلتھ کارڈ ، سعودی عرب میں مقامی ٹرانسپورٹ ، عہدیداروں کا حج ڈیپوٹیشن ، خادم الحجاج ، حج ٹریننگ ، امبارکیشن پوائنٹس وغیرہ پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔