سعودی وزارت حج و عمرہ نے محرم کے بغیر خواتین کو مشروط عمرہ ویزا جاری کرنے کا اعلان کیا ہے۔ آئندہ بیرون مملکت سے خواتین محرم کے بغیر عمرہ ویزا پر آسکیں گی۔عکاظ اخبار کے مطابق وزارت حج و عمرہ نے خواتین کےلیے محرم کے بغیرعمرہ ویزا کے اجرا کی شرائط بیان کی ہیں۔وزارت کا کہنا ہے کہ ’جو خواتین گروپ میں عمرہ پر آنا چاہیں گی اور ان کی عمر 45 برس اوراس سے زیادہ ہو گی۔ انہیں محرم کے بغیر عمرہ ویزا دے دیا جائے گا۔‘

بیان میں کہا گیا کہ’ اگر امیدوار خاتون کی عمر 45 برس سے کم ہو گی تو ایسی صورت میں محرم کے بغیرعمرہ ویزا نہیں دیا جائے گا‘۔یاد رہے کہ وزارت حج وعمرہ بیرون مملکت سے عمرہ عازمین کےلیے ایک اور سہولت کا اعلان کر چکی ہے۔ اس کے تحت غیر ویکسین یافتگان کو عمرہ اور مسجد الحرام و مسجد نبوی میں نماز کی اجازت ہو گی بشرطیکہ عمرہ زائرین کورونا وائرس کا شکار ہوئے ہوں اور نہ کورونا کے کسی مریض سے ملے ہوں۔قبل ازیں سعودی حکومت نے بیرون مملکت سے عمرہ، مسجد الحرام اور مسجد نبوی کی زیارت کے لیے نئے ضوابط جاری کیےتھے۔

بیان میں کہا گیا تھا کہ جو لوگ بیرون مملکت سے آنے والے عمرہ زائرین کو آن لائن ویزا حاصل کرنا ہوگا۔’ آن لائن عمرہ ویزا میڈیکل انشورنس ہولڈر کو دیا جائے گا۔ انشورنس سکیم میں کورونا وائرس سے متاثر ہونے کی صورت میں علاج معالجے کی سہولتیں مہیا ہونا ضروری ہیں۔‘سعودی حکومت نے عمرے کے حوالے سے بعض پابندیاں ختم کی ہیں۔ مملکت آنے سے قبل پی سی آر ٹیسٹ کی رپورٹ پیش کرنے اور ہوٹل قرنطینہ کی پابندی نہیں ہے۔’عمرہ اور زیارت کے دوران سماجی فاصلے کی پابندی بھی ختم کردی گئی ہے جبکہ مسجد الحرام اور مسجد نبوی میں نماز کے لیے اجازت ناموں کا حصول اب ضروری نہیں رہا۔‘