صنعاء ۔ یمن میں ایران نواز دہشت گرد حوثی ملیشیا کی جانب سے خلاف ورزیوں کا سلسلہ جاری ہے۔ اس حوالے سے تازہ کارستانی کے طور پر ملیشیا کے ارکان نے دارالحکومت صنعاء میں ایک سب سے بڑے شاپنگ مال کو منہدم کر دیا ہے۔ یہ کارروائی نجی سیکٹر اور کاروباری افراد کے خلاف جاری جنگ کے سلسلے میں سامنے آئی ہے۔ یمنی سماجی کارکنان نے اتوار کی شب سوشل میڈیا پر بعض وڈیو مناظر پوسٹ کیے۔ ان میں حوثی ملیشیا کے زیر انتظام بلڈوزروں اور مشینوں کو دارالحکومت میں ایک سب سے بڑے شاپنگ مال کو گراتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔ مقامی ذرائع کے مطابق گرایا جانے والا العرب مال صنعاء کے علاقے الخمسین میں واقع ہے۔ یہ ایک یمنی تاجر المطحنی کی ملکیت ہے۔ حوثی ملیشیا نے العرب مال کو گرانے کا جواز یہ پیش کیا ہے کہ تعمیراتی اراضی کے حوالے سے اختلافات ہیں اور یہ جگہ متنازعہ ہے۔ تاہم اس بات کی تصدیق ہو گئی کہ حوثی ملیشیا رمضان کے آغاز سے ہی المطحنی کو بھتے کی وصولی کے لیے بلیک میل کر رہی تھی۔ آخر کار ناکام ہو جانے کے بعد پھر ملیشیا نے مال کو گرا دینے کا اقدام کیا۔ واضح رہے کہ رمضان کے آغاز کے ساتھ ہی حوثی ملیشیا نے زکوۃ کے نام پر تاجروں اور خانگی کمپنیوں سے بھاری رقوم بٹورنا شروع کر دی تھیں۔


اپنی رائے یہاں لکھیں