ایک طرف لبنانی عوام بدترین معاشی بحران کا سامنا کر رہی ہے۔ بے روزگاری اور مہنگائی کے تھپیڑوں کا سامنا کرنے والے لبنانی عوام پر ایران نواز حزب اللہ کے رکن پارلیمنٹ کی بیٹی کی شاہانہ شادی اور اس پر پانی کی طرح پیسہ بہانے پر عوام میں شدید غم وغصہ پایا جا رہا ہے۔

لبنانی ملیشیا حزب اللہ یہ دعویٰ کرتی ہے کہ وہ عوام کے بنیادی حقوق کی فراہمی کے لیے کوشاں ہے مگر دوسری طرف حزب اللہ کے لیڈروں کا اپنا شاہانہ طرز زندگی ان دعووں کی نفی کرتا ہے۔حزب اللہ کے پارلیمانی بلاک کے سابق رکن نوار الساحلی نے اپنی بیٹی کی شادی میں پانی کی طرح پیسہ بہایا۔

شادی کی تقریبات کی جھلکیاں سوشل میڈیا پر وائرل ہونے پر عوام میں حزب اللہ کے خلاف شدید وغم غصے کا اظہار کیا جا رہا ہے۔

سوشل میڈیا پر شہریوں نے تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ حزب اللہ کے لیڈر قوم کی لوٹی ہوئی دولت کو اپنے غیر ضروری مصارف میں بے دریغ خرچ کرتے ہیں۔

ناقدین کا کہنا ہے کہ حزب اللہ لیڈر کی بیٹی کی شادی میں ہونے والے اخراجات تنظیم کے عوام دوست دعووں کی نفی کرتے ہیں۔ ساحلی کی بیٹی کی شاہانہ شادی غربت سے دوچار لبنانی عوام کے خلاف کھلی اشتعال انگیزی ہے۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں حزب کے رکن پارلیمنٹ کی بیٹی کو شادی کے موقعے پر بیش قیمت عروسی لباس میں دیکھا جا سکتا ہے۔ اس کے عروسی لباس کی قیمت ہزاروں ڈالر ہے جب کہ شادی کے موقعے پر مہنگے کھانے اور مشروبات سے مہمانوں کی تواضع کی گئی۔

دوسری طرف الساحلی نے سوشل میڈیا پر تنقید کا جواب دیتے ہوئے کہا ہےکہ اس کی بیٹی کی شادی میں تمام اخراجات بیٹی نے خود اٹھائے۔ ان کا کہنا تھا کہ مجھے اندازہ نہیں تھا کہ لبنانی عوام میری بیٹی کی شادی پر اس قدر ناراض ہوں گے۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔