ریاض :(کے این واصف) لوگوں میں کسی بھی چھوٹے، بڑے واقعہ کی اپنے موبائیل پر تصویر یا ویڈیو بنانا ایک عادت سی بن گئی ہے۔ اپنی اس عادت سے مجبور عمرہ زائرین حرم میں مناسک کی ادائیگی اور عبادتوں کے خشوع و خضوع کو نظر انداز کرتے ہوئے دوران طواف و سعی اپنے فون پر ویڈیو بنانے مین مصروف نظر آتے ہین۔ اس کو یہاں ایک مقامی اخبار میں موضوع بناتے ہوئے لکھا گیا کہ سعودی عرب میں رمضان کے دوران عمرہ زائرین ڈیجیٹل ٹیکنالوجی کا بھرپور استعمال کرنے لگے ہیں۔ خانہ کعبہ کے طواف، مقام ابراہیم پر نماز اور صفا اور مروہ کی سعی کرتے ہوئے موبائل سے عمرے کی ادائیگی کی ویڈیوز اور سیلفی بنا رہے ہیں۔سرکاری خبر رساں ایجنسی ایس پی اے کے مطابق اس سال مسجد الحرام آنے والیزائرین میں عمرے کی ادائیگی کے دوران وڈیوبنانے کا رواج بڑھتا نظر آرہا ہے۔ سیلفیاں بھی بنائی جارہی ہیں۔زائرین جدید موبائل استعمال کررہے ہیں۔ زائرین کا کہنا ہے کہ وہ اپنے سفر کی یادیں ہمیشہ کے لیے محفوظ کرنا چاہتے ہیں۔ موبائل ویڈیو سے بہتر کوئی اوراس کی شکل نہیں ہوسکتی۔واضح رہے کہ کورونا وبا سے قبل عام حالات مین حرمین شریفین کے انتظامیہ نے اندرون حرمین شریفین ویڈیو گرافی پر امتناع عائد کیا تھا۔