حج 2021 کیلئے عازمین حج کی روانگی کا معاملہ التوا کا شکار ہے۔ اس سال فریضہ حج کی ادائیگی کی سعادت سے ہندوستانی عازمین حج سرفراز ہو پائیں گے یا نہیں اس پر بھی ایک قسم کا سوالیہ نشان لگا ہوا ہے۔

حج قرعہ اندازی میں کوئی پیش رفت نہیں
مرکزی حج کمیٹی سے روانہ ہونے والے عازمین حج کی قرعہ اندازی کا معاملہ بھی ابھی تک معلق ہے۔ جبکہ گذشتہ سال کے مقابلے اس سال قرعہ اندازی میں دو سے ڈھائی ماہ کی دیری ہوچکی ہے ۔ سال 2020 کے حج کیلئے ماہ فروری کے آخر تک منتخب عازمینِ حج نے پہلی قسط کی رقم جمع کروادی تھی ۔

20 سے 25 ہزار عازمین حج کی روانگی کا امکان
ہندوستانی سفارت خانہ ریاض سے موصول ہونے والی اطلاع کے مطابق کورونا وباء کے پیشِ نظراس سال 20 سے 25 ہزار ہندوستانی عازمین حج کو ہی حج کی سعادت نصیب ہوسکتی ہے ۔

گزشتہ دنوں ہندوستانی سفیر برائے سعودی عرب اوصاف سعید نے سعودی وزیر برائے حج سے ملاقات کی تھی ۔ ذرائع کے مطابق سعودی حکام نے واضح کیا ہےکہ ابھی بیرونی عازمین حج کے متعلق سعودی حکومت کسی بھی نتیجے پر نہیں پہنچی ہے ۔ اگر اس سال بیرونی عازمین حج کو سفر حج کی اجازت دی جاتی ہے تو اس کا اعلان چند ہفتوں میں متوقع ہے۔ واضح رہے کہ مملکت سعودیہ عربیہ میں 17 مئی تک لاک ڈاؤن عائد رہنے کی اطلاع ہے۔


عازمین حج کو سفر حج کیلئے تیار رہنے کی اپیل
مرکزی حج کمیٹی کے چیف ایگزیکیٹو افسر مقصود احمد خان نے درخواست فارم پر کرنے والے تمام ہندوستانی عازمین سے سفر حج کیلئے تیار رہنے کی اپیل کی ہے۔ مقصود خان نے نمائندہ سے بات کرتے ہوئے کہاکہ سعودی حکومت کی جانب سے ابھی تک حکومتِ ہند کے ساتھ حج کے متعلق کوئی باہمی معائدہ نہیں ہوا ہے۔ لیکن اس بات کی قوی گنجائش ہے کہ اس سال حج کیلئے محدود ہندوستانی عازمین کو موقع ملے۔ حج کمیٹی کے پاس وقت کم بچا ہے لیکن اس کے باوجود حج کمیٹی عازمین حج کو تمام تر سہولیات فراہم کرنے کیلئے کمر بستہ ہے۔ واضح رہے کہ عازمین کی یہ تعداد عام حج کے مقابلے پانچ گنا کم ہے۔