نئی دہلی۔ جیش الہند نے دلی میں اسرائیلی سفارت خانہ کے سامنے ہوئے حملے کی ذمہ داری لی ہے۔ مبینہ طور پر میسیجنگ ایپ ٹیلی گرام کے میسیج کے ذریعہ اس کی تصدیق کا دعویٰ کیا جا رہا ہے۔ اس میسیج میں کہا گیا ہے ‘ طاقتور ترین اللہ کی مہربانی اور مدد سے جیش الہند کے فوجی دلی کے ایک ہائی سیکورٹی علاقے میں دراندازی کرنے اور آئی ای ڈی حملے کو انجام دے پائے۔ یہ حملوں کے ایک سلسلے کی شروعات ہے جو اہم ہندستانی شہروں کو نشانہ بنائے گا اور حکومت ہند کے ذریعہ کئے گئے مظالم کا بدلہ لے گا’۔وہیں، دلی میں اسرائیلی سفارت خانہ کے پاس ہوئے معمولی آئی ای ڈی دھماکہ کے بعد دھماکہ کے لئے استعمال کئے گئے دھماکہ خیز مواد کی دو بار جانچ کی گئی۔ ذرائع نے کہا کہ جانچ میں سامنے آیا کہ ڈیوائس میں ہائی گریڈ ملٹری ایکسپلوزیو PETN پائی گئی۔حکام کا اندازہ ہے کہ القاعدہ جیسے تربیت یافتہ گروپوں کے پاس اس گریڈ کے دھماکہ خیز مواد دستیاب ہونے کا اندیشہ ہے۔ ایک آئی ایس آئی ایس گروپ نے بھی حملے کی ذمہ داری لینے کا دعویٰ کیا لیکن ایجنسیوں کو ان کے شامل ہونے کو لے کر یقین نہیں ہے۔ دھماکے کے بعد کل رات ایران کی ایک فلائٹ میں بھی تاخیر ہوئی اور سبھی مسافروں کی جانچ کی گئی لیکن کچھ بھی مشتبہ نہیں ملا۔وہیں، دارالحکومت میں اسرائیلی سفارت خانے کے نزدیک جمعہ کی شام کو ہوئے دھماکے کے بعد ہندوستان نے اسرائیلی حکومت کو یقین دہانی کرائی کہ ان کے سفارتخانے اور اس کے سفارتکاروں کی حفاظت کو یقینی بنایا جائے گا اور قصورواروں کو پکڑنے کے لئے کوئی کسر نہیں چھوڑی جائے گی۔ دریں اثنا دنیا کی سب خطرناک سمجھی جانے والی ایجنسی موساد دہلی دھماکے کے مجرمین کا پتہ چلائے گی ۔ موساد کے عہدیدار بہت جلد ہندوستان آسکتے ہیں ۔ موساد کو دنیا کی سب تیز اور چالاک تحقیقی ایجنسیی سمجھا جاتا ہے ۔ اسرائیل سفارت خانے کے قریب ہوئے دھماکے کے تار دھیرے دھیرے کھلنے لگے ہیں ۔ جائے حادثہ کے پاس سے ایک لفافہ برآمد ہوا ہے جس میں دھماکہ کو ایک ٹریلر بتایا گیا ۔ ایسے حادثہ کو اسرائیل غیر اہم نہیں سمجھے گا ۔ قیاس کیا جارہا ہے کہ بہت جلد دھماکہ کی جانچ کے لیے اسرائیلی خفیہ ایجنسی موساد ہندوستان آسکتی ہے ۔ اسرائیل کے چاروں طرف سے 13 مسلم ممالک آباد ہیں حالانکہ فلسطین کے خلاف اسرائیل کی جانب سے تشدد اور ظلم کی خبریں آتی رہتی ہیں ۔ موساد کو اسرائیل کی ریڑھ کی ہڈی سمجھا جاتا ہے ۔ دنیا کے سب سے بڑے انٹلی جنس ایجنسیوں کو اس نے پیچھے کردیا ہے ۔ اس کا ہیڈ کوارٹر تل ابیب میں ہے۔ موساد کے ایجنٹ ہر طرح کے ہتھیار چلانے میں ماہر ہوتے ہیں ۔ جدید ترین آلات سے لے کر روایتی ہتھیار تک استعمال کرتے ہوئے وہ دشمن کا خاتمہ کردیتے ہیں ۔ موساد کے لیے کام کرنے والے ایجنٹ کو پہلے ہی بتادیا جاتا ہے کہ اگر وہ پکڑے گئے تو اسرائیل انہیں ناتو پہچانے گا اور نہ تو اپنائے گا انہیں برسوں اپنی فیملی سے دور رہنا ہوتا ہے ۔ موساد ناصرف خطرناک ہتھیار استعمال کرنے میں مشہور ہے بلکہ یہ انٹلی جنس ایجنسی نفسیاتی جنگ میں مہارت رکھتی ہے ۔ موساد نے ہی امریکہ کے سابق صدر بل کلنٹن اور مونیکا لیونسکی کے معشوقہ کی بات ریکارڈ کی تھی ۔۔


اپنی رائے یہاں لکھیں