(قدرت روزنامہ)جب کبھی آپ جہاز میں سفر کرتے ہیں تو لمبے سفر کی غرض سے اکثر لوگ گھر سے نکلتے وقت بھی پانی کی بوتل ساتھ رکھ لیتے ہیں یا اکثر لوگوں کو صرف اپنے ہی گھر کا پانی پینا ہوتا ہے . مگر ائیر پورٹ پر گھر سے لائی ہوئی پانی کی بوتل اندر جہاز میں لے کر جانا منع ہوتا ہے، اگر آپ پانی پینا چاہتے ہیں تو ائیر پورٹ سے ہی پانی خرید کر پینا ہوگا مگر کیا آپ جانتے ہیں کہ ایسا کیوں ہے؟اس کے پیچھے ایک ایسی سائنسی وجہ ہے جو جان کر آپ بھی حیران رہ جائیں گے .

ائیر پورٹ پر بورڈنگ سے پہلے چیکنگ کے دوران اگر کسی کے ہاتھ میں یا بیگ، لگیج میں پانی کی بوتل ہو تو اسے نکلوا دیا جاتا ہے، اور آپ کو ائیر پورٹ سے ان کی ہی پانی کی بوتل خرید کر لے جانا پڑتا ہے.بہت سے لوگ اسے پیسے کمانے کا طریقہ سمجھتے ہیں مگر ایسا بلکل نہیں ہے.دراصل اکثر لوگ پانی کے جیسے دِکھائی دینے والے صاف شفاف کیمیکل کو جہاز کے زریعے سے اسگل کرنے کی کوشش کرتے ہیں، تا کہ پانی سمجھ کر انہیں یہ بوتل لے جانے دیا جائے.

مگر کچھ کیمکل ایسے ہوتے ہیں جو کہ جب ہائی پریشر میں جاتے ہیں تو ان کے ایٹمز ری ایکٹ کرتے ہیں اور اس سے وہ پانی نما کیمیکل ایکسپلوڈ ہو جاتا ہے یعنی دھماکہ ہو جاتا ہے اب یہ دھماکہ چھوٹا ہو یا بڑا انتہائی خطرناک ہی ثابت ہوتا ہے.یہی وجہ ہے کہ ائیر پورٹ پر گھر سے لائی ہوئی پانی کی بوتل پہلے ہی آپ سے لے لی جاتی ہے، اور اگر آپ بوتل لے جانا چاہتے ہیں تو آپ کو اِسے خالی کرنا ہوگا.