راہول گاندھی کا وزیر اعظم مودی پر طنز‘کیرالا میں طلباء سے خطاب
تھرواننتاپورم : کانگریس لیڈر راہول گاندھی نے 14 اور 25 فروری کو وزیراعظم نریندر مودی کی تصویر کے ساتھ دو اخبارات میں شائع اشتہارات کے معاملے میں انھیں طنز کا نشانہ بنایا ہے ۔ را ہول نے ریمارک کیا کہ بار بار دہرانے پر کوئی جھوٹ سچ نہیں ہوجاتا ۔جھوٹ، جھوٹ ہی رہتا ہے۔کانگریس کے سابق صدر آج کیرالا کے دورے پر ہیں۔ انہوں نے کیرالا میں ہونے والے اسمبلی انتخابات کی مہم میں حصہ لیا۔انہوں نے ایک بار پھر وزیر اعظم مودی پر سخت تنقید میں کہا کہ وہ وقفہ وقفہ سے نت نئے دعوے کرتے ہیں ۔ اس میں دروغ گوئی سے کام لیا جاتا ہے ۔ اس کو بار بار دہرایا جاتا ہے لیکن ایسا کرنے سے جھوٹ سچائی میں بدل نہیں جاتا۔ دراصل، پی ایم مودی کی تصویر کے ساتھ ’پربھات خبر‘ اور ’سن مارگ‘ اخباروں میں یکساں اشتہار شائع ہوئے تھے۔ یہ اشتہار پہلے 14 فروری کو، پھر 25 فروری کو
شائع کیا گیا تھا۔ دونوں اشتہارات میں پی ایم مودی کی تصویر کے ساتھ ایک خاتون کی تصویر بھی دکھائی گئی ۔ان اخباروں میں تصویر کے ساتھ شائع اشتہار میں لکھا ہے کہ ’’میں نے اپنا گھر پردھان منتری آواس یوجنا کے تحت حاصل کیا، تقریباً 24 لاکھ خاندانوں کے سر پر چھت ہونے کے باعث وہ خود کفیل ہوگئے۔ ایک ساتھ آئیں اور مل کر خود انحصار ہندوستان کے خواب کو حقیقت بنائیں، اس کے ساتھ ایک نعرہ بھی لکھا ہے،’’خود انحصار ہندوستان، خود انحصار بنگال‘‘۔خبروں کے مطابق اشتہار میں جس خاتون کی تصویر شائع ہوئی اس کا نام لکشمی دیوی ہے۔ لکشمی دیوی کے پاس اپنا مکان نہیں ہے۔ وہ ایک بہت ہی چھوٹے مکان میں رہتی ہیں جس کا ماہانہ 500 روپے کرایہ لیا جاتا ہے۔ اطلاعات کے مطابق لکشمی دیوی کو یہ تک نہیں معلوم کہ ان کی یہ تصویر کب لی گئی تھی۔ اب اس اشتہار کے بہانے اپوزیشن مودی حکومت پر جھوٹے پروپیگنڈے کا الزام لگا رہے ہیں۔


اپنی رائے یہاں لکھیں