• 425
    Shares

جھارکھنڈ اسمبلی سیکرٹریٹ کی طرف سے جاری کردہ ایک حکم کے مطابق اسمبلی کی نئی عمارت میں ایک نماز ادا کرنے کے لئے ایک کمرہ الاٹ کیا گیا ہے۔ 2 ستمبر کو جاری کردہ اس حکم میں کہا گیا ہے کہ عمارت میں کمرہ نمبر ٹی ڈبلیو 348 نماز ادا کرنے کے لیے مختص کیا گیا ہے۔

اس پر اسمبلی اسپیکر اور بی جے پی لیڈر سی پی سنگھ نے کہا کہ ’’ہم نماز کے کمرے کے خلاف نہیں ہیں لیکن پھر انہیں جھارکھنڈ اسمبلی میں مندر میں تعمیر کرانا چاہیئے۔ بلکہ میرا مطالبہ ہے کہ ہنومان مندر تعمیر کرایا جائے۔ اگر اسپیکر اس کی اجازت دیں تو ہم اپنے خرچ پر مندر تعمیر کریں گے۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔