جموں میں پکڑا گیا لشکر کا دہشت گرد، بی جے پی آئی ٹی سیل کا سربراہ تھا

56

نئی دہلی:3۔جولائی ۔(ایجنسیز) جموں پولیس نے لشکر کے ایک بڑے دہشت گرد کو گرفتار کیا ہے۔ گرفتار دہشت گرد کی شناخت طالب حسین شاہ کے نام سے ہوئی ہے۔ پولسکے مطابق گرفتار دہشت گرد کبھی جموں میں بی جے پی کے اقلیتی مورچہ کا سوشل میڈیا انچارج تھا۔ اتوار کی صبح طالب حسین شاہ اور اس کے ساتھیوں کو ریاسی علاقے میں گاؤں والوں نے پکڑ کر پولیس کے حوالے کر دیا۔ پولیس کو دہشت گردوں کے پاس سے دو اے کے 47 رائفلیں، کئی دستی بم اور بہت سے دوسرے ہتھیار اور بڑی تعداد میں گولیاں ملی ہیں۔

بی جے پی کے ترجمان آر ایس پٹھانیا نے کہا کہ آن لائن رکنیت لینے کا ایک ہی نقصان یہ ہے کہ آپ کسی کا پس منظر دیکھے بغیر پارٹی کی رکنیت دیتے ہیں۔ اس دہشت گرد کی گرفتاری کے بعد یہ ایک بڑا مسئلہ بن کر سامنے آیا ہے۔ میں کہوں گا کہ یہ ایک نیا ماڈل ہے، جس کے تحت کوئی بھی بی جے پی میں شامل ہوتا ہے، پارٹی کے اندر اپنا دخل بڑھاتا ہے اورسازش کرتا ہے۔ اس طرح دہشت گرد پارٹی کی اعلیٰ قیادت کو قتل کرنے کی سازش کرتے ہیں۔ تاہم یہ امر راحت کی بات ہے کہ پولیس نے انہیں کسی بھی بڑی واردات کو انجام دینے سے پہلے ہی گرفتار کرلیا۔