تعلیمی سال 2020-21 کے لئے مجموعی طورپر میرٹ پر کھرا اترنے والے 656 طلبہ کو جمعیۃعلماء ہند کی جانب سے اعلیٰ اورپیشہ وارانہ تعلیم کے لئے اسکالرشپ جاری کرنے کا عمل مکمل ہوچکا ہے ۔ اہم بات یہ ہے کہ اس بار اسکالرشپ حاصل کرنے والوں میں غیر مسلم طلبہ بھی شامل ہیں ۔ واضح ہوکہ مالی طورپر کمزور اور ضرورت مند مگر ذہین اور محنتی طلبہ کو جمعیۃ علما ہند کی طرف سے اسکالرشپ دینے کا آغاز 2012 سے ہوا، اس کیلئے مولانا ارشد مدنی پبلک ٹرسٹ کی جانب سے باضابطہ طورپر ایک تعلیمی امدادی فنڈ قائم کیا گیا اور ماہرین تعلیم کی ایک کمیٹی تشکیل دی گئی ، جو میرٹ کی بنیادپر طلبہ کے انتخاب کا فریضہ انجام دیتی ہے ۔جمعیۃعلما ہند کے صدرمولانا سید ارشدمدنی نے اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ جمعیۃعلماء ہند کی پوری تاریخ شاہد ہے کہ اس نے ہمیشہ ذات پات رنگ ونسل، برادری اور مذہب ومسلک سے اوپر اٹھ کر کام کیا ہے اس لئے اگر اس بار اسکالرشپ کے لئے غیرمسلم طلبا کا بھی انتخاب ہوا ہے تو اس میں حیرت جیسی کوئی بات نہیں ہونی چاہئے ، بلکہ ہمارے لئے یہ انتہائی مسرت کی بات ہے کہ ہماری اس ادنی سی کوشش سے بہت سے غیر مسلم ضرورت مندطلبہ کو اپنا مستقبل سنوارنے میں مدد ملے گی…


اپنی رائے یہاں لکھیں