عوام الناس کی پریشانیوں کا خیال رکھتے ہوئے حکومت لاک ڈاؤن سے پرہیز کرے- جمعیت علماء ارشد مدنی”

جالنہ: آج بتاریخ ٢٥- مارچ بروز جمعرات جالنہ میں جمعیت علماء ارشد مدنی مرہٹواڑہ کے ارکان عاملہ کی ہنگامی میٹنگ مفتی مرزا کلیم بیگ ندوی کی صدارت میں منعقد ہوئی، جس میں کئ درپیش اہم امور پرارکان کا تبادلہ خیال ہوا اور اس پر فیصلے لئے گئے، اس سے پندرہ دن قبل لاتور میں بھی جمعیت علماء مرہٹواڑہ کی میٹنگ ہوئی تھی،

١-اصلاح معاشرہ کی مہم کے ضمن میں اضلاع کی کارگزاری سنی گئی، الحمدللہ تمام ہی اضلاع کی جمعیت کی یونٹوں نے اس سلسلہ میں قابل تعریف کام کیا، آئیندہ کے لئے یہ طے ہوا کہ عنقریب جمعیت علماء مرہٹواڑہ کی جانب سےایک رہنما کتابچہ تیار کیا جائے گا جس میں اسلامی تعلیمات کی روشنی میں زوجین کے حقوق، میاں بیوی کے درمیان کیسے خوش گوار معاملات رہیں،جہیز اور گھوڑے جوڑے اور رسومات و خرافات کے نقصانات اور شادیاں آسان اور مسنون طریقہ سے انجام پائی جائیں،ان موضوعات پر مضامین تحریر ہوں گے،

شادی سے پہلے لڑکے اور لڑکی کی تربیت اور ذہن سازی کی جائے گی اور بعدہ انہیں سرٹیفکیٹ دیا جائے اور کوشش کی جائے گی کہ اس کے بعد ہی ان کی شادی ہو، تاکہ ہمارے معاشرے میں عائلی مسائل پیدا نہ ہوں،

٢- جمعیت علماء ارشد مدنی مرہٹواڑہ حکومت سے مطالبہ کرتی ہے کہ کرونا بیماری کا حل صرف لاک ڈاؤن نہیں ہے، اس کے نفاذ سے عوام الناس کو بڑی دشواریوں کا سامنا، خصوصاً یومیہ مزدوری و کاروبار کرنے والوں کو ناگفتہ بہ مصائب پریشانیوں سے گذرنا پڑتا ہے نیز رمضان المبارک کا مہینہ بھی قریب ہے اس میں مسلمان لاک ڈاؤن کی صعوبتوں کو قبول نہیں کرسکیں گے، اس لیے جمعیت علماء مرہٹواڑہ مطالبہ کرتی ہے کہ حکومت مہاراشٹر لاک ڈاؤن نہ لگاۓ،

٣- جمعیت علماء مرہٹواڑہ کو درپیش مسائل سےکیسے نبٹا جائے اور اس کو کیسے مستحکم کیا جائے، اور اس کی دستوری حیثیت کی بقاء کے لئے متفقہ طور کوشش کی جائے گی ایسا تمام ارکان عاملہ نے عزم کیا،

٤-مسلمانوں سے درخواست کی گئی کہ وہ رمضان المبارک میں مدارس اسلامیہ کی دل کھول کر امداد کریں کیونکہ بعد رمضان مدارس کھل جائیں گے اور یہ بھی کہ مدارس اسلامیہ کے سال بھر کے اخراجات کا انحصار رمضان المبارک میں جمع شدہ امداد پر ہوتا ہے،

ان کے علاوہ اور بہت سے امور پر تبادلہ خیال ہوا، اس عاملہ کی میٹنگ میں جمعیت علماء مرہٹواڑہ کے ارکان میں سے مفتی مرزا محمد کلیم بیگ ندوی صدر جمعیت علماء مرہٹواڑہ، حافظ محمد ذاکر صدیقی نائب صدر جمعیت علماء ارشد مدنی مہاراشٹر و صدر جمعیت علماء ضلع بیڑ،مولانا سید نصراللہ حسینی سہیل ندوی نائب صدر جمعیت علماء مرہٹواڑہ، و صدر جمعیت علماء ارشد مدنی ضلع جالنہ، قاری محمد امین الدین جنرل سیکرٹری جمعیت علماء ارشد مدنی مرہٹواڑہ، قاری عبد الرشید حمیدی ناظم تنظیم جمعیۃ علماء مرہٹواڑہ و صدر جمعیت علماء ضلع پربھنی،حافظ محمد شیر خان صدر جمعیت علماء ضلع اورنگ آباد، مولانا محمد عیسیٰ خان کاشفی خازن جمعیت علماء مرہٹواڑہ،و صدر جمعیت علماء شہر جالنہ،محمد مجیب جنرل سیکرٹری جمعیت علماء ضلع اورنگ آباد، قاری محمد اسرائیل صدر جمعیت علماء ارشد مدنی ضلع لاتور، مولانا محمد اعجاز خان بیتی نائب صدر جمعیت علماء مرہٹواڑہ و صدر جمعیت علماء ضلع ہنگولی،مفتی محمد عتیق الرحمن قاسمی جنرل سیکرٹری جمعیت علماء ارشد مدنی ضلع بیڑ، حافظ محمد عیسیٰ نورانی جنرل سیکرٹری ضلع پربھنی، حافظ سید عبید علی جنرل سیکرٹری جمعیت علماء ضلع ہنگولی،مولانا الیاس پٹیل نائب صدر جمعیت علماء ضلع بیڑ،مولانا محمد قیصر جنرل سیکرٹری جمعیت علماء شہر اورنگ آباد، سید عبد المجیب اشاعتی جنرل سیکرٹری شہر جمعیت علماء پربھنی،مولانا محمد نشاط صاحب قاسمی صدر جمعیت علماء ارشد تعلقہ بھوکردن، مولانا محمد عمران خان ندوی جنرل سیکرٹری جمعیت علماء تعلقہ بھوکردن،حافظ عبد السلام قریشی نائب صدر جمعیت علماء ضلع جالنہ وغیرہ موجود تھے اور جو ضلع ناندیڑ اور عثمان آباد کے ارکان نہیں لاک ڈاؤن کی وجہ سے نہیں آسکے انہوں نے بذریعہ فون میٹنگ کے طئے شدہ امور پر اتفاق کیا،مہمانوں کی شاندار ضیافت اور میٹنگ کے جملہ انتظامات حاجی محمد سلیم باوا نے بڑے اچھے طریقے سے انجام دئیے،ایسی خبر محمد ایوب خان جنرل سیکرٹری جمعیت علماء ضلع جالنہ نے اپنے پریس نوٹ کے ذریعہ دی ہے،