جاسوسی کے الزام میں وزارت خارجہ کا ڈرائیور شری کرشن گرفتار، خفیہ جانکاری پاکستان بھیجنے کا الزام

278

دہلی پولیس کے کرائم برانچ نے جمعہ کو سیکورٹی ایجنسیوں کی مدد سے مبینہ طور پر پاکستان کو خفیہ اطلاعات افشا کرنے کے الزام میں وزارت خارجہ کے ایک ڈرائیور کو گرفتار کیا ہے۔

شری کرشن نام کے ملزم ڈرائیور کا دعویٰ ہے کہ اسے آئی ایس آئی کے ایک رکن نے ’ہنی ٹریپ‘ میں پھنسایا تھا، جس نے خود کا نام پونم شرما بتایا تھا۔

شری کرشن نام کے ملزم ڈرائیور کو جواہر لال نہرو بھون سے پکڑا گیا اور ایسا شبہ ہے کہ اس نے کافی حساس جانکاریاں پاکستان کو بھیجی ہیں۔ پولیس نے بتایا کہ وہ پیسوں کے بدلے پاکستان کو خفیہ اطلاعات اور خفیہ دستاویزات مہیا کراتا تھا۔

بتایا گیا ہے کہ وہ جس شخص کو جانکاری دیتا تھا، وہ پونم شرما یا پوجا نام سے جڑا ہوا تھا۔ یہ معاملہ ہنی ٹریپ کا مانا جا رہا ہے۔

بتایا جا رہا ہے کہ خفیہ جانکاری کی بنیاد پر پولیس نے وزارت خارجہ کے ڈرائیور کو گرفتار کیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ پکڑا گیا ڈرائیور پاکستان کی ایک خاتون جاسوس کو وزارت خارجہ سے جڑی جانکاریاں بھیج رہا تھا۔

وہ پونم شرما نام کی جس خاتون کے رابطے میں تھا، وہ بتاتی تھی کہ وہ کولکاتا میں رہتی ہے۔ ذرائع کے مطابق خاتون پاکستان کی آئی ایس آئی ایجنٹ ہے۔ معاملے میں ابھی تک وزارت خارجہ کی طرف سے کوئی آفیشیل بیان نہیں دیا گیا ہے۔