• 425
    Shares

سعودی عرب کی سرکاری خبر رساں ادارے سعودی پریس ایجنسی (ایس پی اے) کے مطابق مملکت سعودیہ کے عملاً حکمراں ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے قومی سرمایہ کاری حکمت عملی پیش کی۔ یہ سعودی عرب کے ویژن 2030 کے اہداف کا حصہ ہے۔ اس اسٹریٹیجی کے تحت سالانہ تقریباً 103 ارب ڈالر غیر ملکی سرمایہ کاری حاصل کرنے اور 2030 تک گھریلو سرمایہ کاری کو بڑھا کر 1.7 ارب ڈالر کرنے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔

سعودی عرب کے ویژن 2030 کا اعلان سن 2016 میں کیا گیا تھا، جس کا مقصد دنیا میں تیل برآمد کرنے والے سب سے بڑ ے ملک کی معیشت کو متنوع بنانا ہے۔

این آئی ایس میں کیا ہے؟
ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان، جو کے ایم بی ایس کے نام سے معروف ہیں، نے اس موقع پر کہا، ”آج سعودی عرب سرمایہ کاری کے ایک نئے دور میں داخل ہورہا ہے جو مملکت کے اور بین الاقوامی پرائیوٹ سیکٹر کے سرمایہ کاروں کو مزید اور زیادہ بہتر مواقع فراہم کرے گا۔”

انہوں نے مزید کہا کہ نئی قومی سرمایہ کاری حکمت عملی (این آئی ایس)کے تحت مختلف شعبوں بشمول مینوفیکچرنگ، قابل تجدید توانائی، ٹرانسپورٹ اور لوجسٹکس، سیاحت، ڈیجیٹل انفراسٹرکچر اور ہیلتھ کیئر میں سرمایہ کاری کے جامع منصوبوں پر توجہ مرکوز کی جائے گی۔ محمد بن سلمان نے کہا،”یہ حکمت عملی اس مقصد کے حصول کا ایک ذریعہ ہے اور ہمیں اپنے اہداف تک پہنچنے اور اپنے عظیم لوگوں کی امنگوں کو پورا کرنے کے لیے اپنی صلاحیتوں پر بھروسے کا بھی مظہر ہے۔”

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔