• 425
    Shares

تھانے(آفتاب شیخ) تھانے مونسپل کارپوریشن کی حدود جیلانی واڑی کے 110 مکینوں نے کارپوریشن کے باہر پھر سے اپنے حق کے مکان کے لئے احتجاج کیا جسے 13 سال قبل ٹی ایم سی نے منہدم کردیا تھا۔
تھانے کی مسلم آبادی والے علاقہ جیلانی واڑی سن 2007 میں 110 مکینوں کو ٹی ایم سی نے منہدم کردیا تھا

لیکن اسی کے ساتھ ہی انھیں کسی نہ کسی اسکیم میں مکان دینے کا وعدہ بھی کیا تھا اورجب کہ یہ لوگ یہاں اس جگہ پر گذشتہ 40 برسوں سے رہتے تھے ٹیکس کی ادائیگی، پانی و بجلی کا بل بھرتے تھے لیکن ٹی ایم سی نے آج 13 سال گذر جانے کے بعد بھی

سی قسم کا ایکشن نہیں لیا جس پر آئے دن یہ لوگ ٹی ایم سی کا گھیراؤ کرتے ہیں لیکن چونکہ ان بے گھروں میں اکثریت مسلم ہے شاید اس لئے ان پر نہ تو یہاں کے نیتا اور نہ ہی مسلم لیڈران اور نہ ہی تھانے مونسپل کارپوریشن توجہ دے رہی ہے ۔یہ سبھی ٹی ایم سی ، مقامی لیڈران کے چکر کاٹ رہے ہیں لیکن آج تک انکی کہیں سنوائی نہ ہونے پر ان لوگوں نے ایک بار پھر ٹی ایم سی کا گھیراو ¿ کیا اور مطالبہ کیا کہ جلد از جلد گھر دیا جائے ورنہ بے مدت بھوک ہڑتال پر بیٹھ جائیں گے ۔ اس سلسلہ میں جیلانی واڑی کے سماجی کارکن و این سی پی کے وارڈ صدر فیروز پٹھان نے

بتایا کہ ٹی ایم سی نے کورٹ کو گمراہ کر کے ان کے مکان منہدم کردیئے اور اوپر سے دعوی کر رہی ہے کہ 6 سو افراد کو گھر دیا گیا ہے جب کہ یہ جھوٹا دعویٰ ہے یہ 110مکین در بدر کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں لیکن آج تک کوئی سنوائی نہیں ہوئی ۔

فیروز پٹھان نے بتایا کہ ہم لوگ تھانے میونسپل کارپوریشن کے علاوہ تھانے کے بڑے بڑے نام نہاد مسلم لیڈران تک کے چکر کاٹ چکے لیکن کوئی سنوائی نہیں ہورہی ہے۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔