کارگذار صدر و سابق وزیر نسیم خان

تھانے میں کانگریس کا کسان مخالف بل و مہنگائی کے خلاف احتجاج و یک روزہ بھوک ہڑتال

تھانے (آفتاب شیخ). مہاراشٹر پردیش کانگریس نے ریاست بھر میں تین زرعی قوانین اور مہنگائی کے معاملے پر مرکز میں مودی سرکار کو بیدار کرنے کے لئے مختلف کسان تنظیموں کے ذریعہ 26 مارچ کو ملک گیر ہڑتال کا مطالبہ کیا ہے۔ مہاراشٹر پردیش کانگریس کے کارگذار صدر اور سابق وزیر عارف (نسیم) خان، پردیش کانگریس کے جنرل سکریٹری اور تھانے انچارج راجیش شرما، طارق فاروقی ، ضلع صدر ایڈوکیٹ وکرانت چوان، کامگر کریتی سمیتی کے کنوینر وشواس اتگی کی قیادت میں تھانے اسٹیشن سے متصل ڈاکٹر بابا صاحب امبیڈکر پتلے کے پاس کانگریس پارٹی کی جانب سے احتجاج و یک روزہ بھوک ہڑتال منعقد کیا گیا تھا۔ جس میں بات کرتے ہوئے عارف نسیم خان نے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی مرکزی حکومت جو کہ جھوٹے وعدوں کی پشت پر سوار ہوکر اقتدار میں آئی تھی اب ان وعدوں کو فراموش کرچکی ہے ملک بھر میں کسان آندولن میں اب تک تقریباً تین سو افراد فوت ہوچکے ہیں، اور اب بھی یہ آندولن چل رہے ہیں، مہنگائی آسمان چھو رہی ہے، بےروزگاری روزبروز بڑھتی جارہی ہے لیکن حکومت اب بھی خواب غفلت میں سورہی ہے اب اس حکومت کو بیدار کرنے کا وقت آگیا ہے۔ مختلف ٹریڈ یونینیں اور سماجی تنظیمیں بھی اس حکومت کے خلاف کانگریس پارٹی کے ساتھ شانہ بشانہ جڑ رہی ہیں۔ اس موقع پر تھانے کانگریس کے صدر ایڈوکیٹ وکرانت چوان، ترجمان سچن شندے، رمیش اندیسے، سکھدیو گھولپ، نورالامین خطیب، جے بی یادو، رویندرا آنگرے، سیلیش شندے، راجیش جادھو، سندیپ شندے، ریاستی کانگریس اور شہر کانگریس کے عہدیداران بڑی تعداد میں موجود تھے۔