تھانے میں سیکس ریکیٹ چلانے والی خاتون بروکر گرفتار، خاتون سے 30 ہزارمیں کاروبار کرواگیا

814

تھانے: (ایجنسیز)غریب، نادار خواتین اور نوجوان خواتین کو پیسے کا لالچ دے کر جسم فروشی کے کاروبار میں ملوث کرنے والی خاتون دلال کو تھانے کرائم انویسٹی گیشن ڈیپارٹمنٹ کے انسداد غیر اخلاقی انسانی اسمگلنگ سیل نے گرفتار کر لیا۔ کرائم برانچ نے جمعہ کو بتایا کہ دو متاثرہ خواتین کو اس کے چنگل سے بچایا گیا ہے۔ انسداد غیر اخلاقی انسانی ٹریفک سیل کو اطلاع ملی کہ تھانے کے گھوڑبندر روڈ علاقے کے لاریڈا ہوٹل میں ایک 28 سالہ دلال خاتون کچھ نوجوان خواتین سے جسم فروشی کا کاروبار کر وارہی ہے۔

اس کی بنیاد پر ایڈیشنل کمشنر آف پولیس اشوک مورالے کی رہنمائی میں ڈپٹی کمشنر شیوراج پاٹل، سینئر پولیس انسپکٹر مہیش پاٹل، جمعدار شردھا کدم، ایس۔ وی سونیس، ڈی. وی چوان، بھوسلے، ڈی. کے والگوڈے، کانسٹیبل پی۔ اے۔ دیوال اور ایگزیکٹو آر۔ نے 12 جنوری 2023 کو شام ساڑھے پانچ تا ​​6 بجے کے قریب گھوڈبندر روڈ علاقے میں جال بچھا دیا۔ اس وقت پولیس جعلی موٹر سائیکل کے ذریعے خاتون دلال تک پہنچ گئی۔

ممبئی کے اندھیری علاقے سے آنیوالی اس دلال خاتون نے ایک خاتون سے 30 ہزار میں سودا کیا۔ اس کے لیے وہ اپنے ساتھ دو عورتوں کو لے کر آئی تھی۔ اسے یہ رقم دینے کے بعد اس نے 5000 روپے ایک خاتون کو اور 25000 روپے اپنے پاس رکھے۔ اس فرضی اسمگلر نے ان تمام چیزوں کے بارے میں خبردار کرنے کے بعد پولیس ٹیم نے اس جگہ چھاپہ مار کر دلال خاتون کو حراست میں لے لیا۔ اس کے خلاف ربوڈی پولس تھانہ میں پی ٹی اے ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ اسے ربوڈی پولیس کے حوالے کر دیا گیا اور 25 سے 28 سال کی دو خواتین کو اس کے چنگل سے چھڑایا گیا۔ ذرائع نے بتایا کہ انھیں اصلاحی مرکز میں بھیج دیا گیا ہے۔ مزید تفتیش سینئر پولیس انسپکٹر سنتوش گھٹیکر کررہے ہیں۔