تھانے : او بی سی ریزرویشن کے منظوری ملنے پر راشٹروادی کانگریس پارٹی نے منائی خوشی

17

تھانے (آفتاب شیخ)سپریم کورٹ نے او بی سی کے لیے سیاسی ریزرویشن کا حکم دیا ہے۔ اس پر یہ دعویٰ کرتے ہوئے کہ یہ ریزرویشن اس وقت کی مہا وکاس اگھاڑی حکومت کے ذریعہ مقرر کردہ بنٹھیا کمیشن کی وجہ سے تھا، سابق وزیر جتیندر اوہاڈ اوراین سی پی تھانے شہرصدر آنند پرانجپے کی رہنمائی میں این سی پی کے او بی سی سیل نے پارٹی آفس پر جشن منایا ۔

اس موقع پر سابق کابینی وزیر ڈاکٹر جتیندر اوہاڈ نے کہا کہ مجھے خوشی ہے کہ او بی سی کو ریزرویشن ملا۔ او بی سی کو آئین میں آرٹیکل 340 لا کر ریزرویشن ملنا چاہیے، ایسی ڈاکٹر باباصاحب امبیڈکر کی منشی تھی ان کی اسی کوشش کی وجہ سے ہی منڈل کمیشن کا قیام عمل میں آیا۔ شرد پوار مہاراشٹر میں منڈل کمیشن نافذ کرنے والے پہلے شخص تھے اور او بی سی کو 27 فیصد ریزرویشن ملا تھا۔

کچھ دعویداروں نے اس ریزرویشن کو روکنے کی کوشش کی عدالت گئے- لیکن بالآخر آج سپریم کورٹ نے او بی سی کے حق میں فیصلہ دیا۔ اور انہیں 27 فیصد حقوق واپس مل گئے۔ میرا ہمیشہ سے یہ موقف رہا ہے کہ سب سے نیچے والے کو ریزرویشن ملنا چاہیے۔ یہاں کے مظلوم اور پسماندہ طبقے کو طاقت دینے کے لیے ریزرویشن ضروری ہے۔